راہل سے ملے جگنیش ،باہر سے حمایت کا دیا اشارہ

0
53

والساڈ، 3 نومبر (یواین آئی) کانگریس کے نائب صدر راہل گاندھی نے گجرات کے اپنے تین روزہ دورہ کے آخری دن بھی بی جے پی پر حملے کا سلسلہ جاری رکھا او راس کا موازنہ کورووں سے کی جب کہ اپنی پارٹی کو پانڈووں کی جماعت قرار دیا۔مسٹر گاندھی نے آج جنوبی گجرات میں سورت ضلع کے کوسمبا میں رنچھوڑ رائے جی کی مندر میں پوجا بھی کی اور اپنے ایک روڈ شو کے دوران اسکولی بچوں کو اپنے ساتھ گاڑی میں سیر بھی کرائی۔انہوں نے والساڈ کے پارڈی میں ایک جلسہ عام میں بی جے پی پر اپنے الزامات دہرائے اور کہا کہ ریاست میں کوئی بھی طبقہ خوش نہیں ہے ۔ انہوں نے کہا کہ گجرات کا سچ یہ ہے کہ یہاں کا ہر طبقہ دکھی ہے اور ناراض ہے ۔انہوں نے کہاکہ گجرات کا الیکشن جھوٹ اور سچ کی جنگ ہے انہوں نے مہابھارت کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ اس وقت جس طرح کووروں کے پاس بڑی فوج تھی ویسے ہی بی جے پی اور مودی جی کے پاس ریاستی حکومت، مرکزی حکومت ، پولیس فوج سب کچھ ہے اور کانگریس پانڈووں جیسی صرف سچ کے ساتھ ہے ۔ لیکن جیت سچ کی ہی ہوگی۔راہل گاندھی نے اپنے دورے کے آخری دن دلت رہنما جگنیش میوانی سے بھی ملاقات کی۔ ملاقات کے بعد جگنیش نے بتایا کہ راہل گاندھی ان کے مطالبات سے متفق ہیں۔ راہل گاندھی نے ہمارے مطالبات کو درست قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ یہ صرف مطالبات نہیں بلکہ آئینی حق ہے اور اسے ہم پارٹی کے منشور میں شامل کریںگے۔ جگنیش نے دوسری پارٹیوں پر نشانہ سادھتے ہوئے کہا کہ راہل گاندھی اور دوسری پارٹیوں کی سونچ میں فرق ہے۔ دوسری پارٹیاں تو بات بھی نہیں سنتی ہے۔ ساتھ ہی انہوں نے کہا کہ اگر کانگریس ان کے مطالبات تسلیم کرلیتی ہے تو وہ اسے باہر سے حمایت دے سکتے ہیں۔ اس بیچ پاٹیدار تحریک کے لیڈر ہاردک پٹیل نے آج الزام لگایا کہ حکمراں بی جے پی الیکشن کمیشن کے ساتھ ملی بھگت کرکے گجرات اسمبلی الیکشن کا انتخاب لڑے گی۔انہوں نے کہا کہ کمیشن کے پہلے سطح کی جانچ میں ہی وی وی پیٹ کی 3350مشینیں فیل ہوگئی ہیں جن سے یہ واضح ہوگیا ہے کہ بی جے پی گھپلہ کرکے الیکشن لڑے گی۔بی جے پی کی کھلی مخالفت کررہے ہاردک نے ان پر کانگریس سے متاثر ہوکر تحریک چلانے کے الزامات کے درمیان آج ایک ٹوئٹ میں کہا کہ الیکشن کمیشن کے پہلے لیول ٹیسٹ میں ہی 3350وی وی پیٹ مشینیں فیل ہوگئیں۔ میں دعوی کہ ساتھ کہتا ہوں کہ بی جے پی گھپلہ کرکے الیکشن لڑے گی۔