آج کا شماره | اردو | हिन्दी | English
Sports

ہندستان عالمی ریکارڈ کی برابری سے ایک قدم دور

india 1
Written by Taasir Newspaper

نئی دہلی، 05 دسمبر (یو این آئی) ہندستان مسلسل نو سریز جیتنے کے آسٹریلیا کے عالمی ریکارڈ کی برابری کرنے سے ایک قدم دور رہ گیا ہے ۔ہندستان نے اوپنر شکھر دھون (67)، کپتان وراٹ کوہلی (50) اور روہت شرما (ناٹ آ¶ٹ 50) کی شاندار نصف سنچریوں سے اپنی دوسری اننگز منگل کو چوتھے دن پانچ وکٹ پر 246 رن پر ڈکلئیر کر سری لنکا کے سامنے تیسرے اور آخری ٹیسٹ میں جیت کیلئے 410 رنز کا ہدف رکھا۔سری لنکا نے اس ہدف کا تعاقب کرتے ہوئے اسٹمپس تک اپنے تین وکٹ محض 31 رن پر کھو دیئے ۔ سری لنکا کو ابھی جیت کے لیے 379 رنز اور بنانے ہیں جو اس کے لئے انتہائی مشکل کام بن چکا ہے اور ہندستان کو تاریخی فتح کی مہک ابھی سے آنے لگی ہے ۔سری لنکا کے گرے تین وکٹوں میں دو وکٹ لیفٹ آرم اسپنر رویندر جڈیجہ اور ایک وکٹ فاسٹ بولر محمد سمیع نے لیا۔جڈیجہ نے اوپنر دمتھ کرونارتنے (13) اور نائٹ واچ مین سرنگا لکمل (صفر) کو آ¶ٹ کیا جبکہ سمیع نے سدیرا سمروکرما (پانچ) کو آ¶ٹ کیا۔اسٹمپس کے وقت دھننجے ڈی سلوا (13) اور انجیلو میتھیوز کھاتہ کھولے بغیر کریز پر تھے ۔ ہندوستان کو پہلی اننگز میں ۳۶۱ رن کی برتری حاصل ہوئی تھی اور اس نے اپنی دوسری اننگز پانچ وکٹ پر 246 رن پر ڈکلیئر کرکے کوٹلہ ٹیسٹ کو مکمل طور اپنے کنٹرول میں لے لیا ہے ۔فیروز شاہ کوٹلہ میدان میں گزشتہ 30 سال سے فاتح رہنے والا ہندوستان اب مسلسل نو سیریز جیتنے کے آسٹریلیا کے عالمی ریکارڈ کی برابری سے ایک قدم دور ہے ۔ آسٹریلیا نے ۵۰۰۲ سے ۸۰۰۲ تک مسلسل نوسیریز جیتنے کا عالمی ریکارڈ بنایا تھا۔ ہندوستان کا یہ سفر ۵۱۰۲ میں سری لنکا کو اسی کی سرزمین پر دو۔ایک سے شکست دینے کے ساتھ شروع ہوا تھا۔ ہندوستان نے اس کے بعد جنوبی افریق کو تین۔صفر، ویسٹ انڈیز کو دو۔صفر نیوزی لینڈ کو تین ۔صفر ، انگلینڈ کو چار۔صفر ، بنگلہ دیش کو ایک ۔صفر ، آسٹریلیا کو دو۔ایک اور سری لنکا کو تین ۔صفر سے شکست دی۔ ہندوستان نے موجودہ سیریز میں سری لنکا کو ناگپور کے دوسرے ٹیسٹ میں اننگز اور 239 رنز کے ریکارڈ فرق سے شکست دی تھی اور اب کوٹلہ ٹیسٹ میں بھی اس نے سری لنکا کے سامنے مشکل ہدف رکھا ہے ۔ ہندوستان نے صبح سری لنکا کو پہلی اننگز میں 373 رن پر سمیٹنے کے ساتھ ہی 163 رنز کی بڑی سبقت حاصل کرلی ۔ ہندوستان نے اس کے بعد جارحانہ بلے بازی کی اور 52.2 اوور میں پانچ وکٹ پر 246 رن جوڑے ۔ سلامی بلے باز شکھر دھون نے اپنی32 ویں سالگرہ کا جشن 176 منٹ کریز پر رہ کر 91 گیندوں کا سامنا کرتے ہوئے نصف سنچری بناکر منایا۔ انہوں نے اپنی اننگز میں پانچ چوکے اور ایک چھکا لگایا۔کپتان وراٹ کوہلی نے اپنی زبردست فارم کو برقرار رکھتے ہوئے صرف 58 گیندوں پر تین چوکوں کی مدد سے 50 رنز کی اننگز کھیلی۔ انہوں نے اس کے ساتھ ہی سیریز میں 600 رنز بھی مکمل کر لیے ۔ وراٹ اس طرح تین مختلف سیریز میں 600 رنز بنانے والے پہلے ہندوستانی بلے باز بن گئے ۔روہت شرما نے بھی بہترین بلے بازی کی اور 49 گیندوں میں پانچ چوکے لگاتے ہوئے ناٹ آوٹ 50 رن بنائے ۔ اجنکیا رہانے نے بھی شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کیا لیکن وہ صرف ایک رن سے اپنی نصف سنچری سے چوک گئے ۔پجارا نے 66 گیندوں میں 49 رن پر پانچ چوکے لگائے ۔ پہلی اننگز میں سنچری بنانے والے مرلی وجے نو رن اور بلے بازی آرڈر میں تیسرے نمبر پر بھیجے گئے اجنکیا رہانے 10 رن بنا کر آ¶ٹ ہوئے ۔ رویندر جڈیجہ چار رن پر ناٹ آ¶ٹ رہے ۔ ہندوستان نے صبح کے سیشن میں دو وکٹ، دوپہر کے سیشن میں دو وکٹ اور آخری سیشن میں ایک وکٹ گنوایا۔ لنچ تک ہندوستان کا اسکور دو وکٹ پر 51 رن اور چائے کے وقفہ تک چار وکٹ پر 192 رن تھا۔ہندوستان نے دوپہر کے سیشن میں 141 رن اور تیسرے سیشن میں 45 منٹ میں 54 رن جوڑے ۔ وراٹ نے نصف سنچری بنانے کے بعد اپنا وکٹ گرنے کے باوجود اننگز ڈکلیئر نہیں کی اور انہوں نے روہت کی نصف سنچری مکمل ہونے کا انتظار کیا۔ جیسے ہی روہت نے اپنی نصف سنچری مکمل کی وراٹ نے اننگز ڈکلیئر کرنے کا اشارہ کردیا۔ ہندوستان نے سری لنکا کو پہلی اننگز میں 135.3 اوور میں 373 رن پر سمیٹنے کے بعد جب اپنی دوسری اننگز شروع کی تو اسے جلد ہی مرلی وجے کا وکٹ گنوانا پڑا ۔ وجے نے پہلی اننگز میں 155 رن بنائے تھے لیکن دوسری اننگز میں وہ تیسرے اوور کی پہلی گیند پر سرنگا لکمل کا شکار بن گئے ۔ انہوں نے وکٹ کیپر نروشن ڈکویلا کو کیچ تھما دیا۔ وجے نے 12 گیندوں میں دو چوکوں کی مدد سے نو رن بنائے ۔ اجنکیا رہانے کو بلے بازی آرڈر میں چتیشور پجارا کی جگہ تیسرے نمبر پر بھیجا گیا۔ٹیم کے نائب کپتان رہانے پہلی اننگز میں ایک رن پر آ¶ٹ ہو گئے تھے اور دوسری اننگز میں انہیں ایک اچھا موقع ملا لیکن وہ اس کا فائدہ نہیں اٹھا پائے ۔ رہانے نے آف اسپنر دلرووان پریرا کی گیند پر ایک غیر ضروری شاٹ کھیلا اور لانگ آن پر لکشن سندکن کے ہاتھوں کیچ آوٹ ہوگئے ۔ انہوں نے 37 گیندوں میں دو چوکوں کی مدد سے 10 رن بنائے ۔ لنچ کے بعد ہندوستان نے اپنا تیسرا وکٹ پجارا کی شکل میں گنوایا ۔ پارٹ ٹائم آف اسپنر دھننجے ڈیسلوا نے پجارا کو سلپ میں انجیلو میتھیوز کے ہاتھوں کیچ کرا دیا۔پجارا صرف ایک رن سے اپنی نصف سنچری سے دور رہ گئے ۔ ہندوستان کا تیسرا وکٹ 106 کے اسکور پر گرا۔ شکھر کو چائنامین گیندباز لکشن سندکن نے وکٹ کیپر نروشن ڈکویلا کے ہاتھوں اسٹمپ کرا یا۔ ہندوستان کا چوتھا وکٹ 144 کے اسکور پر گرا۔ وراٹ اور روہت نے پانچویں وکٹ کے لئے 90 رن کی رفاقت نبھائی ۔ وراٹ اپنی نصف سنچری مکمل کرنے کے بعد سرنگا لکمل کو کیچ دے بیٹھے ۔
سری لنکا کے زیادہ تر کھلاڑیوں نے دوسری اننگز میں بھی ماسک لگا کر فیلڈنگ کی۔ ہندوستان کا پانچواں وکٹ 234 کے اسکور پر گرا اور کپتان وراٹ نے 246 کے اسکور پر اننگز ڈکلیئر کر دی۔ سری لنکا کی جانب سے سرنگا لکمل، لاھرو گماگے ، دلرووان پریرا، دھننجے ڈیسلوا اور سندکن نے ایک ایک وکٹ لیا۔ اس سے پہلے صبح سری لنکا نے نو وکٹ پر 356 رن سے آگے کھیلنا شروع کیا اور اس کی پہلی اننگز 377 رنز پر ختم ہوئی۔ سری لنکا کے کپتان دنیش چنڈیمل نے 147 رن سے آگے کھیلتے ہوئے 164 رنز بنائے ۔ تیزگیندباز ایشانت شرما نے چنڈیمل کو شکھر کے ہاتھوں کیچ کراکر سری لنکائی اننگز 135.3 اوور میں سمیٹ دی۔ چنڈیمل 472 منٹ کریز پر رہے ۔انہوں نے 361 گیندوں کا سامنا کیا اور اپنی اننگز میں 21 چوکے اور ایک چھکا لگایا۔ دوسرے سرے پر سندکن صفر پر ناٹ آ¶ٹ پویلین لوٹے ۔ ہندوستان کی جانب سے ایشانت شرما نے 29.3 اوور میں 98 رن پر تین وکٹ، روی چندرن اشون نے 35 اوور میں 90 رن پر تین وکٹ، محمد سمیع نے 26 اوور میں 85 رن پر دو وکٹ اور رویندر جڈیجہ نے 45 اوور میں 86 رن پر دو وکٹ لئے ۔

About the author

Taasir Newspaper