آج کا شماره | اردو | हिन्दी | English
Politics

پدماوت کے نام سے ریلیز ہوسکتی ہے فلم پدماوتی

Padmawati
Written by Taasir Newspaper

نئی دہلی،30دسمبر(پی ایس آئی)فلم ڈائریکٹر سنجے لیلا بھنسالی کی فلم ‘پدماوتی’ کی رلیز کا راستہ صاف ہو سکتا ہے. میڈیا رپورٹیں کی مانے تو سینسر بورڈ نے فلم کو 26 کٹس کے ساتھ ریلیز کئے جانے کی منظوری دے دی ہے. ساتھ ہی سینسر بورڈ نے فلم کا نام بدل کر ‘پدماوت’ کرنے کو کہا ہے. اس کے علاوہ گھومر گانے میں بھی تبدیلی کرنے کو کہا گیا ہے. اسے لے کر سینسر بورڈ کی طرف سے قائم کئے گئے ایک خصوصی پینل کی تجاویز پر ایسا کئے جانے کی بات کہی جا رہی ہے.معلومات کے مطابق، اگر یہ بدلاﺅ فلم میں کئے جاتے ہیں تو اسے U / A سرٹیفکیٹ دیا جا سکتا ہے. اس کا مطلب ہے کہ اس فلم کو 12 سال سے کم عمر کے بچے والدین کی ہدایت میں دیکھ سکتے ہیں. یہ بھی کہا گیا ہے کہ فلم کے پہلے ایک ڈس کلیمر بھی دینا ہوگا. یعنی فلم کی کہانی کو غیر حقیقی بتایا جائے گا. تاہم، ابھی تک فلم کے ڈائریکٹر سنجے لیلا بھنسالی یا پروڈیوسر کمپنی کی جانب سے اس پر کوئی رد عمل نہیں آیا ہے، لیکن خیال کیا جاتا ہے کہ ان شرائط کو مان لیا جائے گا.مرکزی بورڈ آف فلم سرٹیفیکیشن نے 28 دسمبر کو فلم کو لے کر ملاقات کی تھی. آخری فیصلے تک پہنچنے کے لئے سی بی ایف سی نے ایک خصوصی پینل کی ضرورت محسوس کی تھی. اس خصوصی پینل میں ادیپور کے اروند سنگھ، جے پور یونیورسٹی کے ڈاکٹر چندر سنگھ اور پروفیسر کے.کے. سنگھ شامل تھے۔سینسر بورڈ کی اجازت ملنے کے باوجود فلم کی ریلیز پر سسپنس برقرار ہے۔ کیونکہ کرنی سینا نے الزام لگایا ہے کہ انڈرورلڈ کے دباو¿ میں پدماوتی کی منظوری دی جا رہی ہے. کرنی سینانے دھمکی دی ہے کہ جس بھی ہال میں پدماوتی دکھائی جائے گی اسے تہس نہس کر دیا جائے گا.

About the author

Taasir Newspaper