بنائی گئی با¶نڈری کئی مقامات سے ٹوٹ چکی ہے: ضلع مجسٹریٹ

0
57

مین پوری 17 جنوری(حافظ محمد ذاکر ) ضلع مجسٹریٹ پردیپ کمار ضلع میں زیر تعمیر کامو ں کو مکمل معیار کے ساتھ وقت سے مکمل کرانے کے لئے پابند عہد ہےں، ساتھ ہی بنیادی تعلیم کے اسکولوں میں تعلیمی ماحول، اساتذہ، طلباءو طالبا ت کی موجودگی یقینی کرانے کے لئے حساس ہیں ،یہی وجہ ہے کہ وہ باقاعدگی سے تعمیراتی کاموں کا چل کر زمینی جائزہ لے رہے ہیں ،آج انہوں نے تحصیل کشنی کے دور دراز دیہی حلقوں میں د یہی سڑکوں پر کرائے گئے خصوصی مرمت کے کام کا موقعہ پر جاکر جائزہ لیا،انہوں نے 45.97 لاکھ کی لاگت سے کشنی، رام نگر راستے سے رٹھے سنگھ پور راستے پر 5.8 کلومیٹر کے کام کا موقع پر جاکر جائزہ لیا. انہوں نے موقع پر کام کے معیار کو اچھا پایا ، سڑک کے دونوں کناروں پر مٹی نہیں دالی گئی ہے ، جسے اولین ترجیح پر کرائے جا نے کی ہدایات کام کرانے والے ادارے کے انجینئر کو دی،انہوں نے 11.32 لاکھ کی لاگت سے کشنی، رام نگر سے پہاڑ پور راستے پر کرائے گئے خصوصی مرمت کے کام کا بھی موقع پر جاکر معائنہ کیا۔یہ راستہ 1300 میٹر طویل اور 3.75 میٹر چوڑائی میں ہے، اس کام کی کیفیت بھی تسلی بخش پائی ۔ مسٹر کمار نے کشنی میں سال 2007-08 میں 105.40 لاکھ کی لاگت سے تعمیر اگن شمن (آگ بجھا نے) مرکز کا بھی موقع پر جاکر صورتحال سے واقفیت حاصل کی ، اس گھر میں 51.16 لاکھ کی لاگت سےغیر رہائشی اور 54.24 لاکھ سے رہائشی عمارت کی تعمیر ہونا تھا، حاصل شدہ 105.40 لاکھ روپے عمارت کی تعمیر میں رقم کی سرمایہ کاری کی گئی تھی، لیکن تقریبا 10 سال بعد بھی، عمارت اب بھی نامکمل ہے۔ بنائی گئی با¶نڈری کئی مقامات سے ٹوٹ چکی ہے، نہ تو رہائشی اور نہ ہی غیر رہائشی عمارت کام ابھی بھی نا مکمل ہے، کاموں میں معیار کو نظر انداز کیا گیاہے، بنجر زمین ہونے کے باوجود سالٹ پینٹنگ نہیں کی گئی ، اسی وجہ سے پوری عمارت میں نونا لگ رہا ہے ، انہوں نے موقع پر موجود کا م والے ادارے کے انجینئر سے معلومات کر نے پر پتہ چلا ہے کہ اس کیلئے 146 لاکھ کا اےسٹیمےٹ بھیجا گیا ہے، جو اب حکومتی سطح سے تا خیر ہو رہی ہے ۔ ضلع مجسٹر یٹ نے پرائمری اسکو ل کترا کا معائنہ کیا تو اسکول کی عمارت میں گند گی، بیت الخلا میں پانی کے نظام نہ ہونے، پانی کی نکاسی کا مناسب انتظام نہ ہونے پر اسکول کی ہیڈ ٹیچر رنکی کو متنبہ کرتے ہوئے صفائی اہلکار اہور ن سنگھ کی تنخواہ روکے جانے کی ہدایت کی. معا ئنہ کے دوران، انہوں نے محسو س کیا کہ اسکول میں داخلہ شدہ 42 طالب علموں کے مقابل صر ف 17 طالب علم موجود تھے۔ انہو ں نے ہیڈ ما سٹر کو آگاہ کرتے ہوئے کہا کہ فوری طور پر والد ین کے ساتھ میٹنگ کر طالب علموں کی مو جودگی یقینی کرانے کی سمت میں کام کریں، میں طلباءو طالبا ت کو روزآنہ ڈریس میں بلانے کی بھی ہدایت دی ،انہوں نے اسکول کے ٹوٹے ہوئے دروازوں کی فوری مرمت بھی کرائے جانے کی ہدایت دی ،اسکول کے احاطے میں تعمیر آنگن باڑی مرکز کے معیار پر وہ مطمئن نظر آئے۔معائنہ کے دوران ایگزیکٹو انجنیئر صوبائی سیکشن وغیرہ موجود تھے۔