جنگ چھڑ جائے تو کیا کرنا چاہئے، ہر گھر کے لیے رہنما کتابچہ

0
49

سٹاک ہوم،۷۱جنوری(پی ایس آئی) اسکینڈ ے نیویا کی ریاست سویڈن نے سرد جنگ کے دور کا اور ایک کتابچے کی صورت میں وہ عوامی ہدایت نامہ دوبارہ جاری کرنے کا فیصلہ کیا ہے، جس میں شہریوں کو بتایا جائے گا کہ اچانک جنگ چھڑ جانے کی صورت میں انہیں کیا کرنا چاہیے۔سویڈن کے دارالحکومت سٹا ک ہوم سے منگل سولہ جنوری کو ملنے والی خبروں کے مطابق اس گائیڈ میں عوام کو اس بارے میں واضح حکو متی ہدایا ت سے آگاہ کیا جائے گا کہ اگر اچانک جنگ شروع ہو جائے تو اپنی جانوں کے تحفظ کے لیے سو یڈ ش باشند و ں کو کیا کرنا چاہیے۔آخری مرتبہ یہ کتابچہ سر د جنگ کے دور میں شائع کیا گیا تھا، جس کے بعد یہ سلسلہ بند کر دیا گیا تھا۔ لیکن اب عوام کے لیے اس حکو متی ہدایت نا مے کے دوبارہ اجراءکا فیصلہ اس لیے کیا گیا ہے کہ بحیرہ بالٹک کے خطے میں سلامتی کی مسلسل خراب ہوتی ہوئی صورت حال پر سٹاک ہوم حکومت کو کافی تشویش ہے اور اس کتابچے کی دوبارہ اشاعت اور تقسیم کا فیصلہ اسی تشویش کا نتیجہ ہے۔کسی بھی ہنگامی صورت حال سے نمٹنے کے لیے سویڈن کی پبلک ایمر جنسی ایجنسی کی سر براہ کرسٹینا اینڈرسن نے کہا کہ اس سال اس کتابچے کا موجودہ حالات کے تقاضوں کو سا منے رکھتے ہوئے ا پ ڈیٹ کیا گیا نیا ایڈیشن شائع کیا جائے گا، جسے ’جنگ یا بحران کی صورت میں‘ کا عنوان دیا گیا ہے ۔ اینڈرسن کے مطابق اس کتابچے کا نیا ایڈ یشن اس سال جون تک ملک کے تمام 47 لاکھ گھر انو ں میں مفت تقسیم کیا جائے گا۔ کرسٹینا اینڈرسن نے بتایا کہ اس کتابچے میں حکومت کی طرف سے عوام کو یہ ہدا یت کی گئی ہے کہ عہد حاضر کے بحرانوں، مثلاً کسی بہت بڑے سائبر حملے، دہشت گردانہ کارروائی، شدید خطر ے یا ماحولیاتی تباہی کے علاوہ روایتی ہتھیار و ں سے لڑی جا نے والی جنگ تک، کسی بھی صورت میں ہر گھرا نے کو ا پنے اہل خانہ کے تحفظ کے لیے کیا کرنا چا ہیے ۔ سو یڈ ش سول ایمرجنسی ایجنسی کی سربراہ نے منگل سولہ جنوری کے روز بتایا کہ سٹاک ہوم حکومت کی بحیرہ با لٹک کے علاقے میں پائی جانے والی سکیورٹی صورت حال پر مسلسل تشویش کی وجوہات میں یہ حقا ئق بھی شا مل ہیں کہ خطے میں روس کی طرف سے بار بار کی جانے والی جنگی مشقوں اور عسکری طاقت کے بھر پور مظاہروں میں تیزی آتی جا رہی ہے۔خبروں کے مطابق سویڈن میں اب جو عوامی ہدایت نامہ دوبارہ شائع کر کے پور ے ۔ملک میں گھر گھر تقسیم کیا جائے گا، وہ اپنی ابتدائی شکل میں پہلی بار دوسری عالمی جنگ کے دوران شائع کیا گیا تھا۔