aaaaa 11

لالو پرساد یادو کی رہائی کے لئے راجد کارکنان نے ہون کیا

پٹنہ سیٹی 4جنوری (ذوالقرنین ) چارہ گھوٹالہ کے ایک معاملے میں راجد کے سپریمو لالو پرساد یادو کے خلاف بھلے ہی ، سی بی آئی کی خصوصی عدالت نے اپنا فیصلہ جمعہ تک کے لیے ٹال دیا ہے۔لیکن لالو پرساد کا اہل کانہ کو اب بھی کورٹ کے فیصلہ یقین اور رحم کی امید ہے ۔ یہی وجہ رہی کہ عدالت کے فیصلے آنے سے قبل ان صاحبزادے تیج پڑتا پ یادو پارٹی کارکنان کے ہمراہ مندر میں بھگوان کی پوجا کر نے میں مشغول رہے۔ کچھ اسی طرح لالو پرساد کی رہائی کے لئے پٹنہ سیٹی کی تاریخی دیوی استھان شتلا مندر اگم کنواں ماں شتلا مدر میں راجد یوا سیل نے پوجا اور ہون کیا۔ پارٹی کے یوا سیل کے پردیش جنر ل سکریٹری رندھیر یادو ،شیش کما ر ضلع صدر یوا راجد کی قیادت میں اگم کنو ا ں مندر میں سینکڑوں کارکنان پہونچے اور سپر یمو کی رہائی کے لیے پوجا ارچنا کی۔ شتیش یادو نے بتایاراجد کے کارکنان لالو پرساد کی جیل سے رہائی کے ساتھ ساتھ ان کے اچھی صحت یابی کی دعاءکی گئی۔ اس سے پہلے بھی بہار کے سابق وزیر تیج پڑتاپ یادو راج کا رکنان کے ساتھ پٹنہ جنکشن پر واقع مہاویر مندر پہونچے اور پوجا کی اور کورٹ کے فیصلہ پر اپنی رضا مندی ظا ہر کی۔ واضح ہو کہ راجد سپریمو گزشتہ 24دسمبر سے سی بی آئی جج نے 1990-94کے درمیان دیو گھر کے سرکاری خزانہ سے 89.27لاکھ روپیہ کی غیر قانونی طریقہ سے روپیہ نکالنے کے معا ملہ میں لالو پرساد یادو کو ملزم قرار دیا تھا۔ اسی معاملہ میں 22ملزمین میں سے 6کو بری کردیا تھا۔ جس میں ایک سابق وزیر اعلیٰ جگناتھ مشرا بھی شامل ہیں ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں