ہیلپنگ ہینڈامریکہ کے تعاون سے ’علی گڑھ بچوں کا گھر‘ کے زیر اہتمام تقسیم کمبل کا آخری پروگرام اختتام پذیر

0
51

علی گڑھ21جنوری(پریس ریلیز)غریبوں، ناداروں کو سردی سے بچانے کے لئے امریکہ کی مشہور فلاحی و سماجی تنظیم’ ہیلپنگ ہینڈ ‘کے ذریعہ گذشتہ کئی سالوں سے ’علی گڑھ بچوں کا گھر ‘کے توسط سے تقسیمِ کمبل کا پروگرام منعقد کیا جارہاہے ۔سالِ رواں میں بھی حسبِ دستوریہ پروگرام سول لائن و شہر کے مسلم اکثریتی علاقوں میں کئی مرحلوں میں منعقد ہوا۔ اس کا آخری مرحلہ مورخہ ۰۲ جنوری ۸۱۰۲ ءکو شہنشاہ آباد میں انجام دیا گیا جس میں بطور مہمانِ خصوصی علی گڑھ کے میئر معروف سماجی لیڈر جناب محمد فرقان صاحب نے شرکت کی۔ پروگرام کا آغاز حافظ دلدار رضا کی تلاوتِ کلام اللہ سے ہوا۔ یوپی رابطہ کمیٹی کے سکریٹری برائے صحت ڈاکٹر مسعود احمد نے مہمانِ خصوصی کا پرتپاک خیر مقدم کرتے ہوئے یوپی رابطہ کمیٹی، علی گڑھ بچوں کا گھر اور ان کے ذریعہ انجام دیئے جا رہے سماجی کاموں کی تفصیلات بتائیں۔رابطہ کمیٹی کے تنظیمی سکریٹری ڈاکٹر عبید اقبال عاصم نے غریبوں و ناداروں کے حقوق قرآن و حدیث کی روشنی میں بتاتے ہوئے فرمایا کہ الحمد للہ ہم لوگ اس طرح کے پروگرام گذشتہ پچیس سالوں سے کرتے آرہے ہیں ۔ہیلپنگ ہینڈامریکہ ہر سال ہندوستان کے مختلف شہروں میں غریبوں و ناداروں کی ضروریات کی کفالت وقت کی ضرورت کے مطابق کرتا رہتا ہے۔ رمضان المبارک میں تقسیم راشن، عید الاضحی کے موقع پر غرباءکے لئے قربانی اور سردیوں میں گرم کپڑے اور کمبلوں کی تقسیم اس ادارے کے تعاون سے کی جاتی ہے ۔ علی گڑھ میں یہ پروگرام محترم امان اللہ خاںصاحب کی مدد سے ’علی گڑھ بچوں کا گھر ‘انجام دیتا ہے ۔ سالِ رواں میں بھی یہ تقسیم کمبل پروگرام سول لائن و شہر کے کئی علاقوں میںمنعقد ہوا جس کا یہ آخری مرحلہ ہے ۔ اس سے قبل دسمبر و جنوری میں آزاد نگر،اقرا ءکالونی، علی گڑھ بچوں کا گھر ، شاہ جمال کے علاوہ اے بی کے جی کی گاڑی کے ذریعہ سرد ترین راتوں میں کھلے آسمان کے نیچے بے سہارا لوگوں کو سردی سے بچانے کا سامان نیز اور دوسری کئی جگہوں پر ہزاروں ضرورتمندوں کو کمبل اور گرم کپڑے تقسیم کئے جا چکے ہیں۔مدرسوں میں مقیم دینی تعلیم حاصل کرنے والے بچوں کے درمیان بھی کمبل تقسیم کئے گئے۔علی گڑ ھ کے میئر جناب محمد فرقان صاحب نے اس بات پر مسرت اور خوشی کا اظہار کیا کہ علی گڑھ بچوں کا گھرجو کہ بنیادی طور پر ایک اعلیٰ معیار کا یتیم خانہ ہے اس کے توسط سے اس قسم کے سماجی کام انجام دئے جا رہے ہیں۔آپ نے فرمایا کہ غربت ایک بہت بڑا مسئلہ ہے جسے دور کرنے کے لئے ہم سب کو مشترکہ کوششیں کرنی چاہئیں۔ سماج میں امیری اور غریبی کی خلیج کو کم کرنے کی ضرورت ہے۔ انسانوں سے پیار اور محبت انسا نیت کی بنیاد پر ہونی چاہئے مال و دولت آنی جانی چیز ہے ، اس لئے جو لوگ اپنے غریب بھائیوں کی مدد کے لئے ایسے مواقع پر آگے آتے ہیں وہ قابلِ قدر اور ان کی خدمات قابلِ فخر ہیں۔آپ نے اس موقع پر علی گڑھ بچوں کا گھر کے چیرمین امان اللہ خاں اور ہیلپنگ ہینڈکے ذمہ داران کا بھی شکریہ ادا کیا جو ہزاروں میل کے فاصلے پر رہنے کے باوجود ہندوستان کے غریب بھائیوں کو نہیں بھلاپاتے ہیں۔’علی گڑھ بچوں کا گھر‘ کے رکن انیس احمد نے فرمایا کہ ہمارے چیرمین محترم امان اللہ خاں صاحب بہت سی خوبیوں کے مالک ہیں۔ غریبوں، یتیموں اور ضرورتمندوں کی کفالت ان کا پسندیدہ شوق ہے۔ اس موقع پر وہ دوسرے ضروری کاموں کے باعث علی گڑھ سے باہر ہونے کی وجہ سے صرف پہلے پروگرام میں ہی شرکت کر پائے لیکن ہر موقع پر ان کی نیک خواہشات ہمارے ساتھ رہیں اور وہ ہمیں ہدایات دیتے رہے۔ اللہ رب العزت کی شکر گزاری کرتے ہوئے جذبہ¿ خلوص و محبت کے ساتھ ہمیں ہیلپنگ ہینڈ کے ذمہ داران کا بطورِ خاص شکریہ ادا کرنا ہے جو کئی سال سے تسلسل کے ساتھ ہمارا تعاون کررہے ہیں۔ اے بی کے جی کے چیر مین اس کام کو سلیقہ اور شائستگی کے ساتھ انجام دلا نے پر پوری توجہ مرکوز کرتے ہیں ،ہزاروں کلو میٹر مسا فت کے باوجود ہمہ وقت ان کی نگاہیں اس پروگرام پر لگی ہوتی ہیں۔ اے بی کے جی کے منیجرعبدالمنان نے سبھی شرکاءکا شکریہ ادا کیا ۔ ڈاکٹر عبید اقبال عاصم کی دعا پر پروگرام اختتام پذیر ہوا ۔اس پروگرام کو منعقدکرنے میں حافظ دلدار رضا، محمد شکیل، مولانا قاری محمد ارشاد، حافظ نجم الثاقب، حافظ ذیشان، آزاد خاں وغیرہ نے کافی محنتیں کیں اور اے بی کے جی کے ساتھ تعاون کیا۔اللہ تعالیٰ ان کی محنتوں کو قبول فرمائے اور انہیں اجرِ عظیم عطا کرے آمین۔