آج کا شماره | اردو | हिन्दी | English
Around the World

سابق یمنی صدر صالح کے سوتیلے بھائی کی مارب پہنچنے کی اطلاع

Yemeni soldiers march during a rally to commemorate the first anniversary of an attack on protesters rallying against the rule of Yemen's former president Ali Abdullah Saleh that left scores dead, in Sanaa March 18, 2012. AFP PHOTO/MOHAMMED HUWAIS
Written by Taasir Newspaper

صنعاء2جنوری ( آئی این ایس انڈیا ) یمنی ذرائع کے مطابق سابق صدر علی عبداللہ صالح کے سوتیلے بھائی میجر جنرل علی صالح الاحمر کے منگل کی صبح صنعاءسے نکل کر مارب صوبے پہنچنے کی خبریں ملی ہیں۔ترک خبر رساں ایجنسی نے یمنی سرکاری ذریعے کے حوالے سے بتایا ہے کہ صنعاءکے داخلی اور خارجی راستوں پر حوثی ملیشیا کی سخت ترین ناکہ بندی کے باوجود میجر جنرل الاحمر دارالحکومت سے نکل جانے میں کامیاب ہو گئے۔تاہم ذر ائع نے یہ نہیں بتایا کہ کچھ عرصہ قبل حوثیوں کے ہاتھوں گرفتار ہونے والے الاحمر نے مارب پہنچنے کے لیے کونسا ر±وٹ اپنایا۔علی عبداللہ صالح کے قتل کے بعد ا±ن کے عزیزوں میں یہ اعلی ترین فوجی اہل کار ہیں جو یمن کی آئینی حکومت کے زیر کنٹرول علاقے میں پہنچے ہیں۔یاد رہے کہ الاحمر اپنے سوتیلے بھائی کے دور حکومت میں نمایاں ترین عسکری قائدین میں سے تھے۔ وہ صالح کے بیٹے بریگیڈیئر جنرل احمد سے قبل ریپبلکن گارڈز فورسز کے کمانڈر تھے۔اس کے علاوہ مسلح افواج کے سپریم کمانڈر کے دفتر کے ڈائریکٹر کے عہدے پر بھی فائز رہے۔

About the author

Taasir Newspaper