آج کا شماره | اردو | हिन्दी | English
Uttar Pradesh

تعلیمی سیاحت سے واپسی پر ’علی گڑھ بچوں کا گھر ‘کے طلبا کے لئے استقبالیہ تقریب کا انعقاد

2+2
Written by Taasir Newspaper

علی گڑھ 12جنوری(پریس ریلیز)’علی گڑھ بچوں کا گھر ‘کے طلباءکے جنوبی ہندوستان کے دورے سے واپس آنے پر بچوں کا گھر کے کیمپس میں طلبا کی حوصلہ افروزی کے لئے استقبالیہ پروگرام کا انعقاد کیا گیا۔اس موقع پر’ علی گڑھ بچوں کا گھر‘ کے بورڈ آف ٹرسٹیز کے ممبر انیس احمد نے کہا کہ زمین پر چلنے پھرنے اور گھومنے سے جو تجربات و مشاہدات ہوتے ہیں وہ طلبا کو علمی و عملی دونوں طرح فائدہ پہونچاتے ہیں۔ الحمد للہ ’علی گڑھ بچوں کا گھر ‘کے بچے حسبِ سابق اِس سال بھی تعلیمی دورے سے علی گڑھ واپس آگئے ہیں جس سے ہماری حو صلہ افزائی ہو رہی ہے۔آپ نے مزیدبتایا کہ’ علی گڑھ بچوں کا گھر‘ و جود میں آنے کے بعد مسلسل اس بات کے لئے کوشاں رہا ہے کہ ان بچو ں کو محرومی و یتیمی کا احساس نہ ہو اس کے پیشِ نظر ہر سال بچوں کو مُلک کے مختلف شہروں میں معلومات میں اضافہ اور ذہن کو خوشگوار بنانے کی خاطر تعلیمی ٹور پر بھیجا جاتا ہے جس کے تمام اخراجات بچوں کاگھر کے مخیرحضرات اپنے ذمے لیتے ہیں۔اللہ تعالیٰ سے ان کے لئے اجرِعظیم کی دعا ہے۔سالِ رواں میں یہ ٹور حیدر آباد، چنئی ، میسور اور بنگلور کے معروف شہروں میں گیا جہاں کے صاحبِ ثروت حضرات نے ان بچو ں کا خیر مقدم کیا اور ضیافت کے فرائض انجام دئے۔انیس احمد نے سا لارِ کارواں عبدالمنان اور محمد اسامہ کو مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہا کہ جس انتظام و سلیقہ کے ساتھ عبدالمنان اور محمد اسامہ ہر سال ان اسفار کو آسان بنا دیتے ہیں وہ ہم سب کے لئے حوصلہ افزائی کا باعث ہے۔ اے بی کے جی کے چیر مین محترم امان اللہ خاں صاحب علی گڑھ سے با ہر ہونے کی وجہ سے اس موقع پر شریک نہیں ہو سکے لیکن ان کی خوا ہشات اور نیک تمناﺅں کا پیغام علی گڑھ بچوں کا گھر کے طلبا کے نام سنا یا گیا جس میں آپ نے کہا کہ اللہ تعالیٰ نے انسان کو سفر کی ترغیب اس لئے دی ہے کہ وہ روئے زمین پر گھوم پھر کر اللہ کی نعمتوں کو چشمِ بینا سے دیکھے، ان پر شکریہ ادا کرے، اچھائیوں کو اپنائے اور برائیوں سے بچنے بچانے کی کوشش کرے۔ہم نے ہمیشہ کوشش کی ہے کہ ہمارے بچے چیزوں، مقامات اور عجائبات کا مشاہدہ کرکے انہیں یقینی بنائیں تاکہ آنے والی زندگی میں انہیں فوائد حاصل ہو سکیں۔آپ نے اپنے پیغام میں بچوں سے مطالبہ کیا کہ وہ اپنے اس سفر کی روداد اپنی زبان میں لکھ کر یہ ضرور بتائیں کہ انہوں نے اس دوران کیا سیکھا اور کون سی ایسی دریا فت رہی جس کو انہوں نے پہلی دفعہ محسوس کیاہو۔اس موقع پر بچوں نے بھی اپنے تجرباتِ سفر بیان کئے۔ بچوں کا عام تاثریہی تھا کہ اس تعلیمی سفر سے ان کو بہت زیادہ فائدے حاصل ہوئے ہیںاور بچوں نے بتایاکہ بہت سے مقامات کے بارے میں ہم نے سن رکھا تھا اور انہیں دیکھنے کی تمنا تھی الحمد للہ اس سفر سے ہماری اس خواہش کی تکمیل ہوئی اس کے لئے ہم اللہ رب العزّت کے شکر گزار ہیں اور بچوں کے گھر کے چیر مین محترم جناب امان اللہ خاں صاحب کے بھی مشکور ہیں جو اپنی خصوصی توجہ سے ہم کو ہر سال کسی نہ کسی جگہ کی سیر کراتے ہیں۔ محترم عبدالمنان اورمحمد اسامہ صاحبان نے اس سفر میں جس ذمہ داری کے سا تھ ہم لوگوں کو ہر جگہ پر گھومنے پھرنے، کھلانے پلانے کا خیال رکھا اس کو فراموش نہیں کیا جاسکتا- ہم ان کے لئے دعاﺅں کی سوغات پیش کر تے ہیں۔جگہ جگہ پر مقامی افراد نے جس طرح ضیافت کی وہ بھی ناقا بلِ فراموش ہے۔پروگرام کے اختتام پر انیس احمد نے نئی تعلیمی میقات کے لئے داخلوں کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ علی گڑھ میں اپنے کامیا ب تجربے کے بعد ادارے نے کفالت کی شکل میں اپنی خدمات کی توسیع شمالی ہند کے دیگر علاقوں تک کرد ی ہے-لہٰذا تعلیم کی سہولیات سے استفادہ کے لئے یتیم و ناداربچے بچیاں ( جن کی عمر ۶ برس سے ۰۱ برس ) تک ہو کے سرپرست حضرات بچوں کے داخلے کے لئے ان کی تا ریخِ پیدائش کی سند کے ساتھ ایک ماہ کے اند’ر علی گڑھ بچوں کا گھر‘کے صدر دفتر ’رحمت کدہ‘ آزاد، نگر دودھ پور، علی گڑھ کو درخواست ارسال فرمائیں- علی گڑھ بچوں کا گھر ان کی مکمل کفالت کے لئے اپنی خدمات پیش کرنے کے لئے تیار ہے کیوں کہ انہیں اپنے پیروں پر کھڑا کرنا ہمارا فریضہ ہے -ہماری ذرا سی توجہ سے ان کا مستقبل سنور سکتا ہے۔

About the author

Taasir Newspaper