آج کا شماره | اردو | हिन्दी | English
Around the World

روس نے شام اور یمن میں ایرانیوں کو دھوکہ دیا

12
Written by Taasir Newspaper

تہران،۸۱جنوری(پی ایس آئی)ایران میں مجلس تشخیص مصلحت نظام کے سکریٹری محسن رضائی کی مقرّب ویب سائٹ’تابناک‘ نے روس پر کڑی نکتہ چینی کرتے ہوئے کہا ہے کہ ماسکو نے شام میں ایران کو دھوکا دیا اور یمن میں بھی وہ سعودی موقف کی جانب میلان رکھتے ہیں۔مذکورہ ویب سائٹ نے ایک خصوصی رپورٹ میں بتایا کہ روس اور شام کی حکومتوں کے درمیان معاہدے کے تحت ایران اور ایرانی کمپنیوں کو شام میں تعمیرِ نو اور سرمایہ کاری کے میدان سے دور کر دیا گیا ہے۔ یہاں تک کہ اگر روسی اور شامی حکومتوں کے بیچ تجارتی معاہد و ں میں بھی یہ بات ہے کہ اگر ایران کوئی منصوبہ حاصل کرنا چاہتا ہے تو اسے روس کے ساتھ مذاکرات کرنا ہوں گے۔’تابناک‘ ویب سائٹ نے ایرانی سرکاری میڈیا کو بھی شدید تنقید کا نشانہ بنایا اور کہا کہ وہ ایران میں روس کے مفادات کی ترویج کے لیے روسی پلیٹ فارم بن چکا ہے۔ ویب سائٹ کا اشارہ سرکاری چینل “ا±فق” کی جانب تھا جو ایران اور روس کو قریب لانے کے لیے کوشاں ہے۔رپورٹ میں باور کرایا گیا ہے کہ یہ معاملہ میڈیا کی پیشن گوئی نہیں بلکہ یہ ملک میں سرکاری طور پر پیش کیا جانے والا معاملہ ہے اور ایرانی حکومت کو اس حوالے سے شدید تشویش ہے۔ویب سائٹ کا یہ بھی کہنا ہے کہ ایران نے مغرب کے ساتھ جوہری معاہدہ اس لیے طے کیا کہ وہ روس کی جانب سے مایوسی اور شرمندگی کا شکار تھا۔رپورٹ میں روس پر ’وعدے پورے نہ کر نے‘ اور ’ایران کے قومی مفادات پر ضرب لگانے‘ کا الز ام بھی عائد کیا گیا ہے۔ رپورٹ کے مطابق روس اقوام متحدہ کی قراردادوں میں ایران کے ساتھ کھڑا نہیں ہوا اور اس کے علاوہ S-300 میزائل نظام بھی وقت پر تہران کو پیش نہیں کیا گیا۔ویب سائٹ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ روسیوں نے شام میں ایران کے کردار کو نظر انداز کر دیا اور یمن کے حوالے سے ا±ن کا رجحان سعودی عرب کے موقف کی جانب ہے۔

About the author

Taasir Newspaper