آج کا شماره | اردو | हिन्दी | English
Uttar Pradesh

جامعہ محمودےہ مےں ششماہی امتحان کے نتائج کا اعلان،پوزےشن لانے والے طلبہ کو انعامات سے نوازا گےا

1+1
Written by Taasir Newspaper

کانپور21جنوری(حافظ محمد ذاکر)مفتی اعظم ہند مفتی محمود حسن گنگوہی رحمة اللہ علےہ کی ےاد مےں چودہ برس قبل منامی بشارت کے بعد طالبانِ علومِ نبوت کو سےراب کرنے کےلئے صوبہ کے صنعتی شہر کانپور مےں قائم عظےم دےنی درسگاہ جامعہ محمودےہ اشرف العلوم جامع مسجد اشرف آباد جاجمﺅ کانپور مےں اےک نشست کا انعقاد کےا گےا جس مےں ششماہی امتحان کے نتائج سنائے گئے اور ہر جماعت مےں اول، دوم اور سوم پوزےشن لانے والے طلبہ کو ناظم جامعہ مولانا محمد متےن الحق اسامہ قاسمی صدر جمعےة علماءاترپردےش کے ہاتھوں انعامات سے نوازا گےا۔اس موقع پر طلبہ کو نصےحت کرتے ہوئے مولانا اسامہ قاسمی نے فرماےا کہ آپ لوگوں سےنکڑوں ہزاروں کلو مےٹر کا سفر کرکے اپنا گھر بار اور والدےن کو چھوڑ کر علم دےن حاصل کرنے کےلئے ےہاں آئے ہےں لےکن ےاد رکھئے کہ عمل کے بغےر حصول علم کا کوئی فائدہ نہےں ہے، حصول علم کا اصل مقصد ہی اللہ کی بندگی ہے۔ آج دنےا مےں علم والوں کی کوئی کمی نہےں ہے لےکن عمل کرنے والے بہت کم ہےں۔ شےطان کے پاس بہت زےادہ علم ہے لےکن چونکہ اس نے اپنے علم کا غلط استعمال کےا اور اللہ رب العزت کی نافرمانی کی تو بے انتہاءعلم ہونے کے باوجود بارگاہِ ایزدی مےں لعنتی قرار دےا گےا اور اسے اللہ رب العزت نے اپنے دربار سے دھتکار دےا۔ تارےخ انسانی مےں اےسی بہت سی مثالےں ہےں کہ اللہ رب العزت نے بے پناہ علم سے نوازا لےکن جب اللہ ہی کی نافرمانی کرنے لگے تو اللہ نے دنےا مےں بھی ذلےل و رسوا کےا اور آخرت مےں بھی اس خمےازہ بھگتنا پڑے گا۔اسی لئے ہم سب کےلئے ضروری ہے جس مبارک علم کو سےکھ رہے ہےں اس پر عمل بھی کرےں، نےز علم سکھانے والے اساتذہ کرام کا بے پناہ ادب و احترام کو آلہ¿ علم کاپی، کتاب و قلم کی بے حرمتی سے بچےں،نمازوں کی پابندی کرےں اور وقت کے ضےاع سے اپنے آپ کو بچائےں ۔ جامعہ کے ناظم تعلےمات مفتی اسعدالدےن قاسمی نے فرماےا کہ امتحان خواہ دنےا کا ہو ےا آخرت کا، اس کے بعد ےا تو عزت افزائی ہوتی ہے، انعامات سے نوازا جاتا ہے ےا پھر ذلت و رسوائی مقدر بنتی ہے۔ لہذا خوب محنت سے پڑھےں تاکہ دنےا کے امتحان مےں کامےاب ہوں اور اس پر عمل بھی کرےں تا کہ آخرت مےں ذلت و رسوائی سے محفوظ رہےں۔جامعہ کے استاذ بزرگ عالم مولانا نورالدےن احمد قاسمی نے فرماےا کہ اللہ رب العزت نے علم دےن کےلئے آپ حضرات کا انتخاب فرماےا ہے، اللہ کے نبی صلی اللہ علےہ وسلم نے علمائے کرام کو انبےاءکا وارث قرار دےا ہے،ہمےں اپنے اس مقام کا لحاظ رکھنا چاہئے اور ہر اےسے عمل سے بچنا چاہئے جو علم دےن کی شان کے خلاف ہو۔نشست کے آخر مےں ہر جماعت مےں اول، دوم اور سوم پوزےشن لانے والے اور تقرےری مسابقہ مےں امتےازی نمبرات لانے والے تمام طلبہ قےمتی انعامات سے نوازا گےا اور اُن کی حوصلہ افزائی کی گئی۔نشست مےں جامعہ کے تمام طلباءو اساتذہ خصوصا مولانا محمد اکرم جامعی ،مولانا محمد شفےع مظاہری، مفتی محمد عثمان قاسمی،مولانا فرےدالدےن قاسمی، مفتی عزےز الرحمان قاسمی، مفتی محمد دانش قاسمی،مفتی اظہار مکرم قاسمی، مفتی عامر فرخ آبادی، مفتی عامر کانپوری، قاری شمس الہدی قاسمی، مولاناعبدالجبار اسعدی، مولانا مسعود جامعی ، قاری عبدالحئی، قاری عبدالقدوس، مولانا لقمان مظاہری، مولانا راشد مظاہری، ماسٹر انجم مظاہری،قاری محمد صلاح الدےن، مولانا ثمےن قاسمی، حافظ ےوسف وغےرہ بطور خاص موجود تھے۔

About the author

Taasir Newspaper