بی سی سی آئی محمد سمیع پر عائد الزامات کی جانچ کرے گی

0
62

نئی دہلی، 14 مارچ (یواین آئی) تیزگیندباز محمد شامی ایک طرف جہاں اپنی بیوی کے ساتھ گھریلو تنازعات کے منظر عام پر آنے کے بعد ہر دن نئی مشکلات میں گھرتے جارہے ہیں، وہیں دوسری جانب ہندوستانی کرکٹ کنٹرول بورڈ (بی سی سی آئی) نے اپنی اینٹی کرپشن یونٹ (اے سی یو ) کو شامی پر عائد میچ فکسنگ کے الزامات کی جانچ کا حکم دے کر ان کی مشکلوں کو مزید بڑھا دیا ہے ۔ بی سی سی آئی کا کام کاج سنبھالنے والی کمیٹی سی او اے نے شامی پر میچ فکسنگ میں ملوث ہونے کے الزامات کی جانچ کے لیے اے سی یو کو خط لکھا ہے ۔ ہندوستانی کرکٹر کی بیوی حسین جہاں نے حال ہی میں شامی پر خانگی تشدد ، جنسی زور زبردستی ، ظلم و ستم، شادی کے بعد بھی ناجائز تعلقات رکھنے اور میچ فکسنگ میں شامل ہونے اور پاکستان کی ایک خاتون سے پیسے لینے جیسے سنگین الزامات عائد کیے تھے ۔ س¸ او اے کے سربراہ ونود رائے نے بدھ کو اے سی یو کے چیف نیرج کمار کو شامی پر عائد الزامات کی جانچ کرنے اور ایک ہفتے کے اندر اپنی رپورٹ پیش کرنے کے لیے ای میل بھیجا ہے ۔مسٹر رائے نے بی سی سی آئی کے عہدیداروں اور چیف ایگزیکٹو آفیسر راہل جوہری کو بھی اس کی اطلاع دے دی ہے ۔ مسٹر رائے نے اپنے خط میں کہاکہ “میڈیا میں آنے والی مختلف خبروں کے مطابق شامی پر کئی طرح کے الزامات ہیں۔ سی او اے نے شامی اور ان کی بیوی کے درمیان ٹیلی فون پر بات چیت کی ریکارڈنگ بھی سنی ہے ۔ سی او اے بات چیت میں صرف اس پہلو پر زیادہ فکر مند ہے جس میں یہ دعوی کیا گیا ہے کہ شامی نے محمد بھائی کے ذریعہ پاکستانی خاتون علشبہ سے پیسہ لیا ہے ۔ ” حسین نے اس سے پہلے کولکتہ میں نامہ نگاروں سے بات چیت میں بھی بار بار علشبہ کا نام لیتے ہوئے دعوی کیا تھا کہ شامی اس نام کی پاکستانی لڑکی کے ذریعے میچ فکسنگ کا پیسہ لے رہے ہیں ۔سی او اے کے سربراہ نے اے سی یو کے چیف نیرج سے کہا ہے کہ ہندوستانی کرکٹر پر عائد میچ فکسنگ کے الزامات کی جانچ کی جائے۔
اور کہا ہے کہ س¸ اواے اپنی رپورٹ ایک ہفتے کے اندر پیش کر دے تاکہ بورڈ آگے کی کارروائی کر سکے ۔ واضح رہے کہ بی سی سی آئی نے حال ہی میں کھلاڑیوں کی کانٹرکٹ لسٹ سے بھی شامی کو باہر رکھا ہے ۔وہیں آئی پی ایل میں بھی ان کے کھیلنے پر شبہ پیدا ہو گیا ہے اور ان کی فرنچائزی دہلی ڈیئر ڈیولس بھی شامی کی لیگ میں دستیابی پر بی سی سی آئی کے حکم کا انتظار کر رہی ہے ۔