کھیل

پاکستان میں کھیلنے کےلئے کھلاڑیوں کو لالچ دے رہا ہے ونڈیز بورڈ

Profile photo of Taasir Newspaper
Written by Taasir Newspaper

پورٹ آف اسپین، 20 مارچ (یو این آئی) کرکٹ ویسٹ انڈیز (س¸ ڈبلیوآئی) پاکستان میں اگلے ماہ ہونے والی تین میچوں کی ٹوئنٹی 20 سیریز میں کھیلنے کے لیے اپنے کنٹڑیکٹ اور غیر معاہدہ کھلاڑیوں کو تنخواہ میں اضافہ کا لالچ دے رہا ہے ۔ ویسٹ انڈیز کی ٹیم فی الحال عالمی کپ کوالیفائنگ میں کھیل رہی ہے جس کے بعد بورڈ اس 13 رکنی ٹیم کا اعلان کرے گا جو پاکستان کا دورہ کرے گی۔س¸ ڈبلیوآئ¸ نے فی الحال اس تنخواہ میں اضافہ کو لے کر کوئی اعلان نہیں کیا لیکن مانا جا رہا ہے کہ اس سیریز میں کھیلنے والے کھلاڑیوں کو تین میچوں کی سیریز کے لیے 25۔25 ہزار ڈالر کی رقم کی تجویز کی گئی ہے ۔ ویسٹ انڈیز کی ٹیم کو پاکستان کے کراچی میں ایک، دو اور تین اپریل کو ٹوئنٹی 20میچوں کی بین الاقوامی سریز کھیلنی ہے ۔کھلاڑیوں کے معاہدہ کے مطابق انہیں 70 فیصد زیادہ تنخواہ ادا کی جائے گی۔وہیں ویسٹ انڈیز کے نئے معاہدے کے تحت غیر معاہدہ ٹوئنٹی 20 ماہر کھلاڑیوں کو فی میچ کیلئے 1725 سے 5000 ڈالر کی رقم ادا کی جائے گی جبکہ تینوں فارمیٹس میں ان کی میچ فیس کو دگنا کیا گیا ہے ۔ سمجھا جاتا ہے کہ ویسٹ انڈیز جو ادائیگی اپنے کھلاڑیوں کو کرے گا وہ فنڈز اسے پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) سے ملے گا۔ دونوں ممالک کے درمیان یہ سیریز آئی سی سی کے فیوچر ٹور پروگرام (ایف ٹی پی ) کا حصہ نہیں ہے ۔پی سی بی حکام کے مطابق ایف ٹی پی کے باہر کسی سیریز کے لیے کھلاڑیوں کو ادائیگی کا یہ طے معیار ہے ۔ کرکٹ ویسٹ انڈیز کے چیف ایگزیکٹو جانی گریو نے کہا کہ پاکستان مزید کرکٹ اب آپ میدان پر کھیلنا چاہتا ہے ۔یہ سریز موجودہ ایف ٹی پی سے باہر ہے اور اپریل میں ویسٹ انڈیز کے پروگرام کا حصہ نہیں ہے ۔ایسے میں پی سی بی نے ویسٹ انڈیز بورڈ کو ادائیگی کی اور ویسٹ انڈیز بورڈ اس سریز سے پیسہ نہیں کما رہا ہے ۔
سال 2009 سے ہی پاکستان میں بین الاقوامی کرکٹ بند ہے ۔ایسے میں ملک میں دوبارہ بین الاقوامی کرکٹ بحال کرنے کے لئے پی سی بی مسلسل دوسرے درجے کی ٹیموں کو کھیلنے کے لیے بلا رہا ہے ۔اس سے پہلے 2015 میں زمبابوے کے کھلاڑیوں کو پاکستان میں کھیلنے کے لئے 12،500 ڈالر فی کھلاڑی ادائیگی کی گئی۔

About the author

Profile photo of Taasir Newspaper

Taasir Newspaper

Skip to toolbar