سعودی عرب کا آئندہ 20سال میں16جوہری پلانٹ تعمیر کرنے کا منصوبہ

0
119

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 03-May-2018

ریاض۔امریکہ ،چین ،روس سمیت پانچ ممالک سعودی عرب میں ایٹمی پلانٹس کی تعمیر میں دلچسپی رکھتے ہیں اوراس کام کے حصول کی دوڑ میں شامل ہو گئے ہیں۔سعودی عرب تجارتی، صنعتی، تکنیکی ضروریات سمیت دیگر پر امن مقاصد کے لئے ایٹمی پلانٹ تیار کرنا چاہتا ہے ، سعودی کابینہ اس حوالہ سے قومی جوہری پالیسی کی منظوری بھی دے چکی ہے اور آئندہ بیس سال میں 16 جوہری توانائی کے مراکز قائم کرنے کی منصوبہ بندی کر لی ہے ،وہ امریکہ سے جوہری ٹیکنالوجی کے حصول کی کوششوں میں مصروف ہے۔

امریکی انسٹی ٹیوٹ کے مطابق 5ممالک کی کمپنیاں سعودی مملکت سے ٹھیکے حاصل کرنے کیلئے کوشاں ہیں، ان میں امریکہ ، چین ، روس ، فرانس اور جنوبی کوریا کی کمپنیاں شامل ہیں

غیرملکی خبررساں ایجنسی کے مطابق امریکی حکام کا کہنا ہے کہ پر امن مقاصد کے لئے ایٹمی پلانٹ تیار کرنے میں سعودی عرب کا ساتھ دینا چاہئے،اور ایٹمی عدم پھیلاؤ کی شرائط کے ساتھ سعودی عرب کے ساتھ تعاون کرنا ہوگا۔

ایک امریکی عہدیدار کا کہنا ہے کہ سعودی عرب ایٹمی پلانٹ بنانے کا منصوبہ رکھتا ہے۔ اس مقصد کے حصول کے لئے روس اور چین سعودی عرب کی مدد کرسکتے ہیں،لیکن اپنے سعودی دوستوں کے ساتھ ہمیں گفتگو کرنی چاہئے