سیاست سیاست

کانگریس نے حمایت نہ دی ہوتی تو تاریخ کا حصہ بن گئی ہوتی عام آدمی پارٹی:ماکن

Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 10-July-2018

نئی دہلی،9 اگست (یو این آئی) دہلی پردیش کانگریس سربراہ اجے ماکن نے راجیہ سبھا کے ڈپٹی چیئرمین کے انتخاب میں عام آدمی پارٹی (آپ) کے کانگریس امیدوار کو حمایت نہ دینے پر طنز کرتے ہوئے جمعرات کو کہا کہ اگر ان کی پارٹی نے 2013 میں دہلی میں حکومت بنانے کے لئے اسے بنا مانگے حمایت نہ دی ہوتی تو یہ پارٹی آج تاریخ بن گئی ہوتی۔مسٹر ماکن نے ان خیالات کا اظہار آپ کے سینئر لیڈر سنجے سنگھ کے بدھ کے اس بیان پر دیا کہ ان کی پارٹی ڈپٹی چیئرمین کے عہدے کے لئے کانگریس امیدوار کو تبھی ووٹ دے گی جب کانگریس سربراہ راہل گاندھی آپ کے کنوینر اور دہلی کے وزیراعلی اروند کیجری وال سے اس کے لئے حمایت مانگیں۔مسٹر ماکن نے ٹوئٹ کرکے کہا کہ اگرکانگریس نے نے یہی منطق اپناتے ہوئے 2013 میں آپ کو بنا مانگے حمایت نہ دیا ہوتا تو دہلی میں بی جے پی سرکار بنالیتی اور عام آدم پارٹی تاریخ کا حصہ بن گئی ہوتی۔کانگریس کے سینئر لیڈر نے کہا کہ سپریم کورٹ کے چیف جسٹس دیپک مشرا کے خلاف راجیہ سبھا کے چیرمین کو دیئے گئے مواخذے کی تجویز کے نوٹس پر آپ کے ممبران نے دستخط نہیں کئے تھے اور اس طرح بی جے پی کی مدد کی تھی۔ اس کے علاوہ انہوں نے پوچھا کہ آپ لوک سبھا انتخابات میں کانگریس کے خلاف دہلی میں امیدواروں کو کھڑا کرکے بی جے پی کی مدد کیوں کرتی رہی ہے۔

About the author

Taasir Newspaper