اردو | हिन्दी | English
234 Views
Indian

DGP کے سامنے 5لاکھ کے انعامی ماؤنواز نے کیا سرینڈر

naxal
Written by Tariq Hasan

رانچی، 14اکتوبر (معیز الدین خان)۔ نکسلی تنظیم سی پی آئی ماؤنواز کے سب زونل کمانڈر سنتوش بھوکتا نے جمعہ کو پولیس ہیڈ کوارٹر میں ڈی جی پی ڈی کے پانڈے کے سامنے سرینڈر کر دیا۔ اس نکسلی پر پانچ لاکھ روپے کا انعام تھا۔ جھارکھنڈ کے سمڈیگا اور ارد گرد کے اضلاع میں اس نکسلی نے گزشتہ 15 سالوں میں کئی تشدد کے واقعات کو انجام دیا تھا۔ پولیس کو 38 مختلف مقدمات میں اس کی تلاش تھی۔ سرینڈر کرنے کے بعد ڈی جی پی نے اس نکسلی کو پانچ لاکھ روپے کی رقم کا چیک سونپا۔ سرینڈر کرنے کے بعد نکسلی نے بتایا کہ تنظیم کا اب کوئی اصول نہیں رہ گیا ہے۔ تنظیم کے سب سے اعلیٰ لیڈر لیوی کے پیسوں سے موج کرتے ہیں۔شہروں میں گھر خریدتے ہیں اور بچوں کو اچھی تعلیم مہیا کراتے ہیں۔ جبکہ نیچے طبقے کی تنظیم کے لوگ استحصال کا شکار ہوتے ہیں۔ اس کے علاوہ نکسلی تنظیم میں تشدد، لوٹ مار اور قتل حاوی ہو چکی ہے۔ اس کی وجہ سے سنتوش بھوکتا نے سرینڈر کر دیا۔ اس موقع پر ڈی جی پی ڈی پانڈے نے کہا کہ سال 2017 تک جھارکھنڈ سے نکسلیوں کا خاتمہ ہو جائے گا۔ریاستی پولیس کی آپریشن نئی دِشا کے تحت نکسلی مسلسل سرینڈر کر رہے ہیں۔اس کے تحت اب تک 99 کٹر نکسلیوں نے سرینڈر کر دیا ہے۔ سرینڈر کرتے وقت سمڈیگا کے ایس پی راجیو رنجن کے علاوہ اے ڈی جی اجے بھٹناگر، اے ڈی جی اجے کمار سنگھ، اے ڈی جی انل پالٹا اور آئی جی آر کے ملک کے علاوہ دیگر پولیس افسران موجود تھے۔

About the author

Tariq Hasan