اظہرالدین نے کیرالہ کو دلائی پہلی جیت، ایم پی ، یو پی اور سروسز بھی فاتح

کٹک، 02 دسمبر (یو این آئی) محمد اظہرالدین (99) کی زبردست اننگز کی بدولت کیرالہ نے تریپورہ کے خلاف رنجی ٹرافی گروپ سی میچ کے آخری دن جمعہ کو صبح سات وکٹ سے آسان جیت درج کر لی جو اس کی اس ٹورنامنٹ میں پہلی جیت ہے ۔رنجی ٹرافی کے آٹھویں را¶نڈ میں کیرالہ کی یہ پہلی جیت ہے جس سے اسے چھ پوائنٹس ملے اور اب وہ ٹیبل میں آٹھ میچوں میں ایک جیت،ایک ہار اور چھ ڈرا کے بعد 22 پوائنٹس کے ساتھ چوتھے مقام پر پہنچ گئی ہے ۔کیرالہ کو فتح کیلئے 183 رنز کا ہدف ملا تھا اور اس نے دوسری اننگز میں 51.4 اوورز میں سات وکٹ پر 183 رنز بنا کر صبح کے سیشن میں ہی میچ نمٹا دیا۔کیرالہ کے لیے اوپنر اظھرالدین نے 125 گیندوں کی اننگز میں 15 چوکے لگا کر 99 رنز اور بھون ٹھکر نے 47 رنز بنائے ۔تریپورہ کی جانب سے تینوں وکٹیں گروندر سنگھ نے لیں ۔پہلی اننگز میں 40 رنز بنانے والے اظھرالدین کیرالہ کے لئے ٹاپ اسکورر رہے اور مین آف دی میچ بنے ۔جھارکھنڈ پانچ وکٹ سے جیتاوجینگرام، جھارکھنڈ نے اپنے گیند بازوں اور بلے بازوں کے آل را¶نڈ کھیل سے اچھی حالت میں پہنچے آسام کو رنجی ٹرافی گروپ بی میچ کے آخری دن جمعہ کو پانچ وکٹ سے ہرا دیا۔ جھارکھنڈ کو اس سے چھ پوائنٹس حاصل ہوئے ۔فالو آن کا سامنا کرنے والی آسام کی ٹیم کے لئے رشبھ داس (113) نے شاندار سنچری اور شیو شنکر رائے نے 86 رنز کی اننگز کھیلی اور ٹیم کو 109 رنز کی برتری دلا دی۔آسام کی دوسری اننگز 104.4 اوور میں 299 رن پر سمٹی۔اس نے جھارکھنڈ کے سامنے جیت کے لیے 110 رن کا ہدف رکھا اور ٹیم نے 20.2 اوور میں پانچ وکٹ پر 111 رنز بنا کر جیت اپنے نام کر لی۔جھارکھنڈ کے لیے اوپنر آنند سنگھ نے 30 رن اور اشانک جگی نے 34 رنز بنائے ۔آسام کے لئے داس نے 49 رن پر تین وکٹ اور گوسوامی نے 38 رن پر جھارکھنڈ کے دو وکٹ لئے ۔اس سے پہلے آسام نے اپنی اننگز کی شروعات کل کے 269 رن پر پانچ وکٹ سے آگے کی تھی۔اس وقت رائے 80 رنز بنا کر کریز پر تھے ۔رائے نے 227 گیندوں میں 10 چوکے اور ایک چھکا لگا کر 86 رنز بنائے ۔اس سے پہلے اوپنر رشبھ نے 256 گیندوں میں 13 چوکے لگا کر 113 رنز بنائے تھے اور ٹیم کو برتری تک پہنچایا۔دونوں بلے بازوں نے دوسرے وکٹ کے لئے 157 رن کی شراکت کی۔رائے کے آ¶ٹ ہونے کے بعد آسام نے محض 25 رن پر اپنے باقی پانچ وکٹ گنوائے ۔جھارکھنڈ کی جانب سے راہل شکلا نے 74 رن پر تین وکٹ لئے ۔اجے یادو اور اشیش کمار کو دو دو وکٹ ملے ۔سکرے کے پنجے میں پھنسا بڑودہدھرم شالہ، مدھیہ پردیش کو رنجی ٹرافی گروپ اے میچ کے چوتھے اور آخری دن اپنی جیت کی خانہ پری کے لئے صرف دو گیندوں کی ضرورت پڑی اور اس نے بڑودہ کے آخری وکٹ نکالنے کے ساتھ پوری ٹیم کو 114 رنز پر سمیٹتے ہوئے 232 رنز کے بھاری فرق سے میچ اپنے نام کر لیا۔درمیانہ تیز گیند باز چندرکانت سکرے نے بڑودہ کا آخری وکٹ ساگر مگولکر (آٹھ) کے طور پر نکالا اور ساتھ ہی فرسٹ کلاس کرکٹ میں تیسری بار اپنا اننگز میں پانچ وکٹ کے ہندسہ مکمل کیا۔ مدھیہ پردیش نے بڑودہ کی پوری اننگز 35.2 اوور میں کل کے ہی اسکور 114 رن پر نمٹاتے ہوئے جیت اپنے نام کی جس سے اس کوچھ پوائنٹس ملے ۔اس جیت کے بعد ٹیبل میں وہ 19 پوائنٹس کے ساتھ چوتھے نمبر پر ہے ۔بڑودہ آخری نمبر پر ہے ۔347 رنز کے بڑے ہدف کا تعاقب کر رہی بڑودہ کیلئے اوپنر کیدار دیودھر نے سب سے زیادہ 18 رن اور پنال شاہ نے 17 رنز بنائے ۔مدھیہ پردیش کیلئے سکرے نے 17 رن پر پانچ وکٹ، ایشور پانڈے نے دو وکٹ اور پنیت داتے کو دو وکٹ ملے ۔ایشور کو میچ میں ان کی 36 رنز کی اننگز اور سات وکٹ کے لئے مین آف دی میچ منتخب کیا گیا۔دہلی کو ڈرا میچ سے ملے تین پوائنٹسچنئی، دہلی اور ودربھ کے درمیان رنجی ٹرافی گروپ بی میچ چوتھے اور آخری دن جمعہ کو خراب موسم کی نذر ہو گیا اور ڈرا ختم ہو ا۔دہلی کو پہلی اننگز کی برتری کی بنیاد پر تین پوائنٹس ملے جبکہ ودربھ کے حصے میں ایک پوائنٹس آیا۔یہ میچ چاروں دن خراب موسم کی وجہ سے متاثر رہا اور اس میں تیسرے دن ایک بھی گیند پھینکی نہیں گئی۔میچ کے چوتھے دن دہلی نے اپنی پہلی اننگز آٹھ وکٹوں کے نقصان پر 250 رنز پر ڈکلیئر کر دی۔دہلی کو پہلی اننگز میں 67 رنز کی برتری حاصل تھی جو اسے تین پوائنٹس دلانے کیلئے کافی تھی۔ودربھ نے اپنی پہلی اننگز میں 183 رنز بنائے تھے اور اس نے میچ ڈرا ختم ہونے تک اپنی دوسری اننگز میں 19 اوور کے کھیل میں تین وکٹ پر 37 رنز بنائے ۔ودربھ کی دوسری اننگز میں سمت نروال، نودیپ سینی اور وکاس ٹوکس نے ایک ایک وکٹ لیا۔دہلی کو اس میچ سے تین پوائنٹس ملے اور اب وہ سات میچوں سے 21 پوائنٹس لے کر ٹیبل میں چوتھے نمبر پر ہے ۔اس گروپ میں جھارکھنڈ (32) پہلے ، کرناٹک (30) دوسرے اور اڑیسہ (22) تیسرے مقام پر ہے ۔ودربھ 14 پوائنٹس کے ساتھ چھٹے نمبر پر ہے ۔ریلوے پر یو پی کی 221 رنوں سے بڑی جیت راجکوٹ، کلدیپ یادو (33 رن پر چار وکٹ) کی شاندار بولنگ سے اتر پردیش نے رنجی ٹرافی گروپ اے میچ کے چوتھے اور آخری دن ریلوے کو بڑے ہدف کے سامنے سستے میں نمٹاتے ہوئے 221 رنوں کی بڑی جیت درج کر لی ہے ۔ اس جیت سے اس کے چھ پوائنٹس حاصل ہوگئے ہیں۔اترپردیش نے گروپ اے میچ میں ریلوے کے سامنے 377 رنوں کا ہدف دیا تھااور تیسرے دن ہی اس کے پانچ وکٹوں کو محض 35 رنز پر گرا دیا تھا۔ ریلوے کو جیت کیلئے مزید342 رن چاہیے تھے لیکن آخری دن جمعہ کو اس کے باقی پانچ بلے باز صبح کے سیشن میں 99 رن بناکر ہی گر گئے اور 61.5 اوور میں پوری ٹیم 155 رنوں پر سمٹ گئی۔یوپی کے لیے کلدیپ یادو نے 12.5 اووروں میں 33 رن دے کر ریلوے کے سب سے زیادہ چار وکٹ لئے جب پروین کمار کو 22 رنوں پر دو وکٹ اور امتیاز احمد کو 39 رن پر دو وکٹ ملے ۔اس سے پہلے ریلوے نے کل کے 35 رن پر پانچ وکٹ سے آگے کھیلنا شروع کیا۔کل کے ناٹ آ¶ٹ بلے باز وکٹ کیپر مہیش راوت تین اور کرن شرما سات رن پر ناٹ آ¶ٹ تھے ۔ مہیش 19 رنز بنا کر آج کے چھٹے بلے باز کے طور پر آ¶ٹ ہوئے جبکہ کپتان کرن نے 35 رنوں کی اننگز کھیلی۔