مودی نے نوٹ بندی کر کے لوگوں کی اقتصادی آزادی چھین لی:اسلم باشا ہ

یلور(تمل ناڈو)09نومبر(پریس ریلیز) نوٹ بندی کی پہلی برسی 8 نومبر کو پورے ملک کے ساتھ تمل ناڈو کے ضلع وانمباڈی ویلور میں بھی یوم سیاہ کا انعقاد کیا گیا۔ اس موقع پر ویلور ضلع کانگریس کمیٹی کے اقلیتی شعبہ کے چیئر مین الیاس خان، تمل ناڈو کانگریس کمیٹی کے اقلیتی شعبہ کے ریاستی چیئرمین ڈاکٹر اسلم باشا ہ کی قیا دت میں ایک احتجاجی مظاہرہ کا انعقاد کیا گیا۔ صحا فیو ں سے خطاب کرتے ہوئے اسلم باشا ہ نے کہا کہ بی جے پی کی قیادت والی مرکزی حکو مت نے پلاننگ کمیشن کو کمزور کر کے قومی معیشت کو بر باد کر دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ برطا نوی حکومت میں ہندوستان کی معیشت دنیا کی کل معیشت کی 27 فیصد اور جب انگریز ہندو ستا ن کو چھوڑ کر گئے تو یہ ایک فیصد بھی نہیں رہ گئی تھی۔ اسلم باشا ہ نے کہا کہ ایسے وقت میں کانگریس نے مضبوط ملک کی بنیاد رکھی۔ انہوں نے کہا کہ آج حالات یہ ہیں کہ یو پی اے کے دور اقتدار میں جو جی ڈی پی 8.7 فیصد تک پہنچ گئی تھی وہ اب 5.8 فیصد پر ہے یعنی کہ جی ڈی پی 2.7 فیصد گر چکی ہے۔ ڈاکٹر اسلم باشا ہ نے کہا کہ مودی نے نوٹ بندی جیسا افسوس ناک فیصلہ لے کر لوگوں کی اقتصادی آزادی پر حملہ کیا ہے۔ انہوں نے نوٹ بندی کو صدی کا سب سے بڑا گھوٹالہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ نوٹ بندی کا فیصلہ لیتے ہوئے مودی نے جتنے بھی اس کے فائدے گنائے تھے ان میں سے ایک بھی سچ ثابت نہیں ہوا۔انہوں نے کہا کہ مودی نے ہندو ستان کے غریبوں، مزدوروں ، متوسط طبقہ کے لوگوں کو قطار میں لگنے کو مجبور کیا ، کوئی امیر قطار میں نہیں لگابلکہ ان کے لئے نوٹ تبدیل کرنے کے خصوصی انتظا مات موجود تھے۔ انہوں نے کہا کہ نوٹ بندی کا قہر جب پورے ملک پر برپا ہو رہا تھا اس وقت 150 سے زائد لوگوں نے اپنی جانیں دے دی تھیں لیکن حکومت نے کسی کو ایک پیسہ بھی معا و ضہ کے طور پر نہیں دیا۔مظاہرے میں سینٹرل ڈ سٹرکٹ چیر مین امتیاز احمد، وانمباڈی شہر صدر فرید احمد، وانمباڈی یوتھ کانگریس کے صدر فیصل امین، وانمباڈی شہر کانگریس اقلیتی شعبہ مدثر احمد کے علاوہ ایس سی ایس ٹی شعبہ کے صدر راج کمار، کویاراسن، جلیل باشاہ، کبیر الدین بھی شامل رہے۔ احتجاج کے آخر میں ریاستی سکریٹری مزمل نے تمام حاضرین کا شکریہ ادا کیا۔