کے کے آر کے سامنے ممبئی کے لئے آر پار کی صورتحال

ممبئی، 5 مئی (یو این آئی) آئی پی ایل 11 کے مقابلے اب کئی ٹیموں کے لئے کرو یا مرو کے دور میں پہنچتے جارہے ہیں اور تین بار کی چمپئن ممبئی انڈینس کے لئے اتوار کو کولکاتا نائٹ رائیڈرس کے خلاف یہاں ہونے والا مقابلہ ٹورنامنٹ میں اس کے آگے کی سمت طے کرنے والا میچ ثابت ہوگا۔ روہت شرما کی کپتانی والی ممبئی کی ٹیم نے اس سیزن میں کافی اتار چڑھا¶ والی کارکردگی کا مظاہرہ کیا ہے ۔ ممبئی نے اب تک نو میچوں میں سے تین میچ جیتے اور چھ میچ گنوائے ہیں۔ ممبئی نے کل اندور میں کنگس الیون کے خلاف مقابلہ مشکل ہونے کے باوجود جیت لیا تھا اور خود کو ٹورنامنٹ میں قائم رکھا تھا۔ ممبئی کو اگر پلے آف میں جانے کی امیدیں برقرار رکھنی ہیں تو اسے اپنے اس سلسلے کوباقی کے پانچوں لیگ میچوں میں قائم رکھنا ہوگا ۔ اگر وہ ایسا نہ کرپائی تو ایک بھی شکست اس کا کھیل بگاڑ دے گی۔ دوسری جانب کے کے آر کی ٹیم 9 میچوں میں پانچ فتوحات، 10 پوائنٹ اور تیسرے مقابلے کے ساتھ فی الحال بہتر پوزیشن میں ہے لیکن اس کے لئے باقی کے پانچ میچوں میں سے تین میچ جتینے لازمی ہیں تاکہ اس کی پلے آف کی پوزیشن یقینی ہوسکے ۔ کولکاتا کے کپتان دنیش کارتک چاہیں گے کہ اگلے کچھ میچوں میں ہی پلے آف یقینی بنالیا جائے تاکہ آخری میچوں تذبذب کی صورتحال نہ رہے ۔ اس مرحلے پر میزبان ٹیم کی ڈبل سنچری کی تکمیل بھی مشکل نظر آتی تھی لیکن ایڈم روسنگٹن نے عمدہ بیٹنگ کا مظاہرہ کر کے اپنی ٹیم کو تباہی سے بچا لیا۔روسنگٹن نے ریکارڈو ویسکونسیلس کے ساتھ مل کر آٹھویں وکٹ کے لیے 80 رنز جوڑ کر ٹیم کی پوزیشن کو مستحکم کیا، اس شراکت کا خاتمہ اس وقت ہوا جب شاداب نے 90 رنز بنانے والے روسنگٹن کی اننگز کا خاتمہ کردیا جبکہ ان کے اگلے اوور میں ریکارڈو بھی پویلین لوٹ گئے ۔حارث سہیل نے 8 رنز بنانے والے بریٹ ہٹن کو آ¶ٹ کر کے نارتھمپٹن شائر کی بساط 259 رنز پر لپیٹ دی۔پاکستان کی جانب سے شاداب خان نے شاندار بالنگ کا مظاہرہ کرتے ہوئے 77 رنز کے عوض 6 وکٹیں حاصل کیں جبکہ راحت علی نے 2 وکٹیں لیں۔جب پہلے دن کا کھیل ختم ہوا تو پاکستان نے بغیر کسی نقصان کے 6 رنز بنائے تھے اور اسے میزبان ٹیم کا اسکور برابر کرنے کے لیے 253 رنز درکار تھے ۔