بودھ گیا میڈیٹیشن سنٹر میں بچوں کا جنسی استحصال ،چیئرمین گرفتار

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 31-August-2018

گیا،30اگست(یواین آئی) بہار کے مظفر پور گرلس شیلٹر ہوم میں بچیوں کے ساتھ جنسی استحصال کے معاملے میں ابھی تفتیش ہی چل رہی تھی کہ اب بودھ گیا کے ایک میڈیٹیشن سینٹر میں بچوں کے ساتھ جنسی استحصال کا معاملہ سامنے آیا ہے۔گیا شہر سے تقریبا دس کلومیٹر دور بودھ گیا کے مست پورا میں واقع بدہسٹ نوولس اسکول اینڈ میڈیٹیشن سینٹر کے چیئرمین بھنتے سجائے عرف سنگھ پریئے بھنتے پرادارہ میں رہ رہے بچوں کیساتھ جنسی استحصال کا الزام ہے۔ متأثر بچے آسام کے ضلع کربیالانگ کے رہنے والے ہیں ۔متأثر بچوں نے اپنے ساتھ ہو رہے غیر اخلاقی فعل کی شکایت جب کسی طرح اہل خانہ سے کی تو فورا اہل خانہ بودھ گیا پہنچ گئے۔اہل خانہ نے جب معاملہ کے بارے میں معلومات حاصل کرنی چاہی تو ملزم نے بھکشونامی عملہ کے ذریعہ سبھی 15متأثر بچوں کو سنستھاسے باہر نکال دیا گیا۔بتایا جاتا ہے کہ بودھ بھکشو نے ادارے سے نکالتے وقت بچوں کو کپڑے بھینہیں دیئے۔کسی طرح بچوں کے اہل خانہ انہیں لیکر گیا کے وشنو پد تھانہ علاقے کے آسام بھون پہنچے۔ واقعہ کی اطلاع ملنے پر پولیس سپرنٹنڈنٹ کی سربراہی میں وشنو تھانہ کی پولیس نے آسام بھون پہنچ کر معاملے کی تفتیش کی ۔معاملے کی سنگینی کو دیکھتے ہوئے پولیس سپرنٹنڈنٹ کی ہدایت پر پولیس نے فوری کاروائی کرتے ہوئے ملزم بھنتے کو گرفتار کرلیا ہے۔گرفتار ملزم سے پوچھ گچھ کی جا رہی ہے۔