جشن آزادی کے موقع پر پرنسپل مزمل الحق مدنی کاطلباوعوام سے خطاب

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 20-August-2018

کشن گنج : 18 اگست (آفتاب عالم صدیقی) یوم آزادی کے آتے ہی تمام باشندگان ہند کی پیشانیوں میں جوش و خروش و خوشی و مسرت اور فرحت و انبساط کی لہریں دیکھنے کو ملتی ہیں۔ اظہار مسرت میں اپنے مدرسوں ،اسکولوں ،دکانوں اور مکانوں کو قومی پرچم ترنگا سے سجاتے ہیں۔ اور وطن سے محبت و ہمدردی کے اظہار میں سبھی ایک ساتھ ملکر پرچم کشائی کرتے ہیں۔اس موقع پر توحید ایجوکیشنل ٹرسٹ کے اراکین ،اساتذہ ،طلبہ اور طالبات نے بھی بڑی عقیدت مندی کے ساتھ جشن آزادی کا لطف لیا ۔ اور ٹرسٹ کے زير اہتمام تمام مدرسوں اور اسکولوں میں تزک و احتشام کے ساتھ قومی پرچم لہرایا گیا ۔ سب سے پہلے مدرسہ عثمان لتحفیظ القرآن سبھاش پلی میںساڑھے ساتبجے ،جامعہ عائشہ الاسلامیہ میں30:07بجے ،توحید آئی ٹی آئی میں 8بجے ،جامعۃ الامام البخاری میں 8:15 بجے ،جامعہ عائشہ الاسلامیہ بیلوا میں30:10بجے اور عبد المتین سلفی انٹر نیشنل اسکول بیلوا میں45:10 میں پرچم کشائی کاعمل وجود میں آيا ۔ ٹرسٹ کے چیرمین شیخ مطیع الرحمن بن عبد المتین حفظہ اللہ کے سفر حج میں ہونے کی وجہ سے نائب چیرمین شیح محمدعطاء الرحمن مدنی نے سبھی جگہوں میں پرچم کشائی کر یوم آزادی کی یاد تازہ کی۔ وہیں پرنسپل محمد مزمل الحق مدنی نے وطن سے بے لوث محبت پر اپنی جانوں کی قربانیاں پیش کرنے والے شہداء کو خراج عقیدت و تحسین پیش کیا۔ جشن آزادی کے موقع پر حاضر ین کو خطاب کرتے ہوئےکہا کہ آج ہم ملک کے طول و عرض میں تزک و احتشام کے ساتھ آزادی کا جشن منار ہے ہیں ۔ اس آزآدی کی نعمت طویل جد و جہد کے بعد حاصل ہوئی ہے۔ اس آزآدی میں ہمارے اسلاف عظام نے جانی ومالی قربانیاں دیں ، تختہ دار پر چڑھے ، قید و بند کی زندگی گزاری۔ بالاخر 1947 کو شہیدوں کی شہادت بلاتفریق قومی و ملی اتحاد کی طاقت رنگ لائی اور انگریزوں کے ناجائز تسلط سے دیش آزاد ہوا ۔ اور 15 اگست 1947 کو آزاد بھارت کا پہلا وزیر اعظم پنڈت جواہر لعل نہروں جی نےدہلی میں واقع لال قلعہ کے لاہوری دروازہ پر پہلی آزا دی کا کا پرجم لہرایا اور ملک سے خطاب کیا ۔ اسی دن سے ہر سال ملک کا وزیر اعظم پندرہ اگست کو لال قلعہ کے لاہوری دروازہ پر پرچم کشائی کرتے ہیں اور قوم کو خطاب کرتے ہیں ۔ پرنسپل مزمل الحق مدنی نے انہی نیک جذبات کے ساتھ تمام حاضرین کا شکریہ ادا کیا ۔ اس موقع پر سبھی اراکین ٹرسٹ ، اساتذہ ،طلبہ و طالبات یوم آزادی کی یاد میں انتائی خوش نظر آئے ، انقلاب زندہ باد کے نعرے سے محفل گونج اٹھی۔ پرچم کشائی کے بعد طلبہ و طالبات نے آزادی سے متعلق کلچر و ثقافتی پروگرام کا انعقاد کیا جن میں قومی گیت ،قومی ترانے پر ایکشن کا مظاہرہ پیش کیا وہیں حب الوطنی پر کئی زبانوں میں تقریر اور مکالمے وغیرہ پیش کئے گئے ۔