جموں اور کشمیر

کشمیر: 2 روز قبل ’البدر‘ میں شامل ہونے والے 4 نوجوان گرفتار

Profile photo of Taasir Newspaper
Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 26-August-2018

سری نگر: فوج نے شمالی کشمیر کے ضلع کپواڑہ کے بالائی علاقہ کلاروس (ہندواڑہ) میں البدر جنگجو تنظیم سے وابستہ 4 جنگجوؤں کو گرفتار کرنے کا دعویٰ کیا ہے۔ گرفتار شدہ چاروں کشمیری نوجوانوں جن کی عمر 25 برس سے کم ہے، نے دو روز قبل یعنی 24

اگست 2018 کو اپنی تصویریں شوشل میڈیا پر وائرل کرکے ’البدر‘ میں شامل ہونے کا اعلان کیا تھا۔

فوج کا کہنا ہے کہ انہیں لائن آف کنٹرول (ایل او سی) پر پاکستان زیر قبضہ کشمیر میں داخل ہونے کی کوشش کرتے ہوئے گرفتار کیا گیا۔ فوج کی طرف سے جاری ہونے والے ایک بیان میں کہا گیا ’فوج کو مصدقہ اطلاع ملی کہ البدر کے تین جنگجو حال ہی میں اس گروپ میں شامل ہونے والے چار نوجوانوں کو پاکستان زیر قبضہ کشمیر کی طرف گائیڈ کررہے ہیں۔ فوج اور ریاستی پولیس ان کی لوکیش کا پتہ لگانے میں کامیاب ہوئے‘۔ بیان میں کہا گیا ’طرفین کے مابین مختصر وقت تک جھڑپ جاری رہی۔ سیکورٹی فورسز کی جانب سے انتہائی صبر وتحمل سے کام لیا گیا۔ اس کا مقصد گروپ میں شامل ہونے والے نئے لڑکوں کو خودسپردگی کا موقع دینا تھا۔ جہاں البدر میں حال ہی میں شامل ہونے والے چار نوجوانوں نے خودسپردگی اختیار کی، وہیں ان کو پاکستان زیر قبضہ کشمیر کی طرف گائیڈ کرنے والے تین جنگجو اندھیرے کا فائدہ اٹھاتے ہوئے فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے‘۔ بیان میں مزید کہا گیا ’اندھیرے کا فائدہ اٹھاکر فرار ہونے والے جنگجوؤں کی تلاش جاری ہے‘۔

بتادیں کہ ضلع کپواڑہ کے رہنے والے چار نوجوانوں نے 24 اگست کو اپنی تصویریں سوشل میڈیا پر وائرل کرکے جنگجو تنظیم ’البدر‘ میں شامل ہونے کا اعلان کیا۔ چاروں نوجوانوں نے ہاتھوں میں اسلحہ اٹھا رکھا تھا۔ تصویروں کے کیپشنوں میں مذکورہ نوجوانوں نے اپنی شناخت عمر ساکنہ ہوٹی پورہ ہندواڑہ، طاہر احمد ساکنہ کھورو ہندواڑہ، وسیم خان ساکنہ کارگامہ ہندواڑہ اور عمر بشیر ساکنہ چوٹی پورہ ہندواڑہ کے بطور ظاہر کی تھی۔ ایک رپورٹ کے مطابق ان نوجوانوں میں سے وسیم نے ایم بی اے کی ڈگری جبکہ عمر نے ایک سالہ ’آپریشن تھیٹر ‘ ٹریننگ کورس کیا ہے۔ ذرائع نے بتایا کہ گرفتار شدہ نوجوانوں کے قبضے سے اسلحہ و گولہ بارود برآمد کیا گیا ہے۔

About the author

Profile photo of Taasir Newspaper

Taasir Newspaper

Skip to toolbar