اقلیتی مالیاتی کارپوریشن کیلئے 38 عہدوں کو منظوری

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 14-September-2018

پٹنہ (پرمود کمارپاٹھک): ریاستی کابینہ نے محکمہ اقلیتی فلاح کے تحت کام کرنے والے بہار اسٹیٹ اقلیتی مالیاتی کارپوریشن کے کاموں کیلئے 38 عہدوں کو منظوری دی ہے۔کابینہ نے محکمہ اقلیتی فلاح کے تحت ہاسٹل منیجر کیڈر ضابطہ 2018 کو بھی منظوری دے دی۔ وزیراعلیٰ نتیش کمار کی صدارت میں جمعرات کی شام ہوئی کابینہ کی میٹنگ میں مجموعی طور پر 42 تجاویز کومنظوری دی گئی۔ محکمہ کے پرنسپل سکریٹری سنجے کمار اور اوپندر پانڈے نے کابینہ کے فیصلوں کی تفصیلات بتاتے ہوئے کہا کہ ریاستی کابینہ نے ماب لنچنگ اور تشددد میں مارے گئے لوگوں کے ورثا کو ملنے والے معاوضہ اسکیم کو بھی منظوری دے دی ہے۔ اس سلسلے میں سپریم کورٹ کے ذریعہ ریاستی حکومت کو دی گئی ہدایت پر عمل کرتے ہوئے بہار سرکار نے فوری طور پر نافذ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ اس اسکیم کے نفاذ کے بعد ماب لنچنگ یا تشدد کے شکار ہونے والے افراد کو حادثہ کی تاریخ سے ایک ماہ کے اندر ایک لاکھ روپئے دے گی اور فاسٹ ٹریک عدالت کے ذریعہ معاملے کو یومیہ سنوائی کرکے 6 مہینے کے اندر انجام تک پہنچایا جائے گا۔ کابینہ نے اپنے ایک اور اہم فیصلے میں میڈیکل افسر ، اسسٹنٹ انجینئر اور ویٹنری ڈاکٹروں کے عہدے پر بحالی کے عمل میں بھی ترمیم کردی ہے۔ اب ان عہدوں پر بحالی کیلئے انٹرویو کی ضرورت نہیں ہوگی اور بغیر انٹرویو کے ہی امیدوار بحال کئے جاسکیںگے۔ اس کے علاوہ ان عہدوں پر بحالی میں ان امیدواروں کو 50 فیصد ریزرویشن دیا جائے گا جنہوں نے اپنی پڑھائی ریاستی کی یونیورسٹیوں سے کی ہوگی۔ مہاتما گاندھی کے 150 ویں یوم پیدائش کے موقع پر قیدیوں کی رہائی کی تجویز کو بھی منظوری دی ہے۔ اس کے تحت 2 اکتوبر 2018، 6 اپریل 2019 اور 2 اکتوبر 2019 کو تین مرحلوں میں قیدیوں کو رہا کیا جائے گا۔ کابینہ نے ایجوکیشن لون کیلئے متعلقہ کمیشن کو مضبوط کرنے اور جموئی ،ارول، تروینی گنج، رجولی اور جگدیش پور میں گورنمنٹ ویمنس کالج کی عمارت کی تعمیر کیلئے 6.73 کروڑ روپئے منظور کئے ہیں۔ اس کے علاوہ کالجوں میں بھی بڑے پیمانے پر بحالی کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ میٹنگ میں 23 ڈگری کالجوں کیلئے 23 پرنسپل، 1162 اسسٹنٹ پروفیسر اور 299 ملازمین کے عہدوں کوبھی منظوری دی گئی۔