بقایا رقم نہ دینے پر کسانوں نے آڑھتیوں کے خلاف تھانے میں کیا مظاہرہ

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 15-September-2018

بھوگائوں ،مین پوری(حافظ محمد ذاکر ) دو درجن سے زائد کسانوں نے آڑھتیوں پر ان کی محنت کی کمائی کا روپیہ نہیں دیئے جانے کا الزام لگاتے ہوئے چال فریب کرنے والے آڑھتیوں کے خلاف سخت کاروائی کا مطالبہ کرتے ہوئے کوتوالی میں مظاہرہ کر نے کے بعد تحریر پولیس کو دی ہے،آڑھتیوں نے انتظامیہ کو متنبہ کیا کہ اگر موئثر کارروائی نہ ہوئی تو ریل کو روک کر مظاہرہ کریںگے ،جمعہ کو کسان برجناتھ سنگھ راجپوت کی قیادت میں آئے کسان کشن پال سنگھ، رام کھلاڑی، ہردے رام، منوج کمار، وجے سنگھ، چھوٹے سنگھ، رمیش چندر، برجیندر سنگھ، کرپال سنگھ، رامپم پرکاش، مکیش سنگھ، بھورے سنگھ، رادھے شیام راجپوت، وغیرہ سمیت دو درجن سے زائد کسانوں نے تھانہ احاطے میں آڑھتی دھرمیندر کمار اور نصرالدین پر لگایا کہ سال 2015 میں آڑھتیوں نے ہم لوگوں سے لاکھوں روپیہ لہسن و آلو خریدا تھا ،خریداری کئے جانے کے بعد دونوں آڑھتی کسانوں کا روپیہ دئے جانے کی یقین دہانی دے کر مکر جاتے ہیں ،ہم کسانوں کوذہنی طور پریشان کیا جارہا ہے ،کسانوں کا بقایا روپیہ نہ ملنے کے سبب ان کے سامنے روزمررہ کے کھانے پینے کے مسائل پیش آرہے ہیں ،ساتھ ہی ساتھ کھیتی کے لئے ،کھاد ،بیج ،کا بھی بحران پیدا ہو گیا ہے ،اگر اس مسائل کا حل جلدی نہ ہوا تو بہت سے کسان خود کشی کر نے پر مجبور ہو جائیںگے ،تحریر میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ اگر ان کے مسائل کا جلد ازالہ نہ کیا گیا ،آڑھتیوں سے روپیہ نہ دلا یاگیا تو کبھی بھی وہ ریل روک کر احتجاج کریں گے ،اس ضمن میں علاقائی پولس افسر پر یانک جین نے بتایا کہ کسانوں کے مسائل کو نہایت سنجیدگی سے لیا گیا ہے، رپورٹ درج کرنے سے پہلے ملزم آڑھتیوں سے بات کی جائے گی،اگر کسانوں کو آڑھتی ان کی فصل کا روپیہ نہیں دیتے ہیں،تو سخت کارروائی عمل میں لائی جائے گی. علاقائی پولس افسر نے بتایا کہ وہ کسانوں کے مسائل سے اعلیٰ افسرن کو بھی آگاہ کریںگے .