سپریم کورٹ کا مليالي ناول ‘ميشا’ پر پابندی عائد کرنےسے انکار

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 05-September-2018

نئی دہلی : سپریم کورٹ نے مصنف ایس ہریش کے مليالي ناول ‘ميشا’ پر پابندی عائد کرنے سے بدھ کو انکار کر دیا۔

چیف جسٹس دیپک مشرا، جسٹس اے ایم كھانولكر اور جسٹس ڈی وائی چندرچوڑ کی بنچ نے درخواست گزار این رادھا کرشنن کی عرضی کویہ کہتے ہوئے مسترد کر دیا کہ کسی مصنف کے تخیل پر روک نہیں لگائی جا سکتی۔ مصنف کے تصور کو تحفظ ملنا چاہئے۔

جسٹس مشرا نے کہا’’آئین میں صاف واضح ہے کہ کسی بھی شخص کو اپنے خیالات کو رکھنے کا حق ہے۔ ایک مصنف اپنےچاروں طرف کے ماحول کو دیکھتا ہے، اس کا مشاہدہ کرتا ہے اور اس کو اپنے الفاظ کے ذریعے بیان کرتا ہے۔آپ کسی شخص کی مخالفت تو کر سکتے ہیں، لیکن آپ کو اسے غلط ٹھہرانے کے لئے منطقی بنیاد پر اپنی بات کہنی ہو گی‘‘ْ۔

قابل ذکر ہے کہ مليالي مصنف ایس ہریش کے ناول پر کچھ ہندووادی تنظیموں کو اعتراض تھا۔ ناول ’ميشا ‘کے کچھ اقتباس سوشل میڈیا پر وائرل ہو گئے تھے۔