پارلیمنٹ کی کاروائی صحیح ڈھنگ سے نہ چلنے سے دلبرداشتہ ہوں: نائیڈو

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 02-September-2018

نئی دہلی : نائب صدر جمہوریہ ایم وینکیا نائیڈو نے اتوار کو کہا کہ ملک معیشت اور دیگر میدانوں میں آگے بڑھ رہا ہےلیکن میں ایوان کی کاروائی مناسب ڈھنگ سے نہ چلنے کی وجہ سے دلبرداشتہ ہوں۔

نائب صدر جمہوریہ کی حیثیت سے ان کے ایک سالہ کام کی مدت پر مبنی کتاب’’ موئنگ آن۔۔موئنگ فارورٖڈ۔۔ون ایر اِن آفس‘‘ کی رسم اجرا کے موقع پر انہوں نے کہا’’ مجھے افسوس ہے کہ پارلیمنٹ میں کام توقعات کے مطابق کام نہیں ہو پا رہا ہے لیکن دیگر سبھی میدانوں میں ترقی ہو رہی ہیں ۔

عالمی بینک، اے ڈی بی، عالمی اقتصادی فورم اور دیگر تنظیمیں جو ریٹنگ دے رہی ہیں وہ کافی حوصلہ افزاء اور تسلی بخش ہے،معاشی طور پر ابھی جو کچھ بھی ملک میں ہو رہا اس پر ہر ہندستانی کو فخر ہونا چاہئے۔

کتاب کی رسم اجرا وزیر اعظم مودی نے انجام دی ۔اس موقع پر سابق وزیر اعظم منموہن سنگھ، ایچ ڈی دیوگوڑا، لوک سبھا اسپیکر سمترا مہاجن، وزیر خزانہ ارون جیٹلی، لال کرشن اٖڈوانی اور راجیہ سبھا میں کانگریس کے نائب لیڈر آنند شرما بھی موجود تھے۔

نائب صدرجمہوریہ نے کہا کہ عام زندگی میں شفافیت، جواب دہی اور نظم و ضبط بے حد ضروری ہے، ان کا ماننا ہے کہ سماجی زندگی سے منسلک شخص کو عوام کے سامنے اپنی حصولیابیوں اور کاموں کا حساب دینا چاہئے۔انہوں نے کہا کہ سبھی سیاسی پارٹیوں کو مل کر پارلیمنٹ میں کام کرنا ہوگا جس سے پارلیمنٹ کی کاروائی مناسب طور سے چل سکے۔اگر ایوان ٹھیک طور سے چلے گا تو اسمبلیوں،کارپوریشنوں اور دیگر شعبے بھی اس سے نصیحت لیں گے اور ملک کا نوجوان بھی اس سے کچھ سبق حاصل کریگا۔