ایم جے اکبر پر خاموشی توڑیں مودی: آنند شرما

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 15-October-2018

نئی دہلی، (محمد گوہر) کانگریس نے اتوار کے روز کہا کہ مرکزی وزیر مملکت ایم جے اکبر پر لگائے گئے جنسی زیادتی کے الزامات پر وزیر اعظم نریندر مودی کو اپنی خاموشی توڑنی چاہئے کیونکہ اس معاملے میں ملک کے لوگ ان کی رائے جاننا چاہتے ہیں۔ کانگریس کے سینئر لیڈر آنند شرما نے یہاں پریس کانفرنس میں کہا کہ جب بھی ملک میں حساس معاملے سامنے آتے ہیں اور عوام ان مسائل پر مسٹر مودی کی رائے جاننا چاہتے ہیں، تو وہ خاموشی اختیار کر لیتے ہیں۔ کانگریس مسٹر اکبر کے معاملے میں عوامی جذبات کے ساتھ ہے اور وہ بھی اس پر وزیر اعظم کی رائے جاننا چاہتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ وزیر مملکت پر جس طرح کے سنگین الزامات لگے ہیں، اس سے حکومت کے لئے عزت اور وزیر اعظم کے وقار پر سوال کھڑا ہوتا ہے۔ وزیر اعظم صرف من کی بات کرنا جانتے ہیں اوریک طرفہ بات کرنے میں یقین رکھتے ہیں۔ ملک کے وہ پہلے وزیر اعظم ہیں جنہوں نے پارلیمنٹ میں ایک بھی سوال کا جواب نہیں دیا ، صرف تقریر کرتے رہے۔ گزشتہ ساڑھے چار سال میں ایک بھی پریس کانفرنس نہیں کیا، جہاں صحافی آزادانہ طور پر ان سے سوال کر سکیں۔ مسٹر آنند شرما نے کہا کہ آزاد ہندوستان کی تاریخ میں رافیل ملک کا سب سے بڑا دفاعی سودے کا گھوٹالہ ہے اور اس میں خود وزیر اعظم ملوث ہیں۔ رافیل کی خریداری میں جس طرح سے وزیر اعظم کے علاوہ کسی کو بھی معلومات نہیں ہے، اس سے پتہ چلتا ہے کہ اس میں وہ خود ملوث ہیں۔ کانگریس کی جانب سے مسلسل رافیل کا معاملہ اٹھایا جارہا ہے اور اس کی جانچ مشترکہ پارلیمانی کمیٹی (جے پی سی) سے کرانے کا مطالبہ کر رہی ہے لیکن حکومت پیچھے ہٹ رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ رافیل سودے میں نہ صرف کروڑوں کا گھوٹالہ ہوا بلکہ ملک کی سلامتی کو بھی نظر انداز کیا گیا ہے۔