دوماہ میں دو قیدیوں کی موت سے جیل انتظامیہ سوالوں کے گھیرے میں

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 09-October-2018

پورنیہ(عاشق رحمانی)، پورنیہ سینٹرل جیل میں دوماہ کے اندر دوقیدی کی موت ہونے سے جیل انتظامیہ سوالوں کے گھیرے میں لاکر کھڑاکردیاہے۔ وہیں اس خبر کو لے کر کانگریس پارٹی کے ضلع صدر اندوسنہانے پریس ریلیز کے دوران جیل انتظامیہ کی لیپا پوتی اور علاج کے دوران قیدی کی موت پر ڈاکٹر کی لاپروائی برتے جانے پر سخت ناراضگی ظاہرکی ہے۔ اندوسنہا نے کہا کہ پورنیہ سنیٹرل جیل میں گذشتہ دو مہینہ میں دوموت ہونا کافی گہری سازش کو ظاہرکرتاہے۔ اس معاملے میں پولس جیل انتظامیہ کے حکم پر دیگر ملازم کے ذریعہ قیدی کو صدر اسپتال لیجاکر پولس اپنا پلڑاجھار لیا ہے۔ وہیں چار دن قبل سینٹرل جیل میں موت کے بعد جوباتیں سامنے آرہی ہے اس سے یہ پتہ چلتاہے کہ سزا یافتہ قیدی نتیانند منڈل جو کی بھوانی پور بلاک کے شری پور کے رہنے والے تھے کہ موت جیل میں ڈاکٹر اوپی ساہ کے ذریعہ ریفر کرنے میں دیری کی وجہ سے ہوگئی یہ بھی سچ ہے کہ جیل میں ڈاکٹر اوپی ساہ کے موجود رہتے ہوئے شہر کے لائن بازار میں نرسنگھ ہوم چلایاجاتاہے۔ پرائیویٹ کلینک سے اچھی خاصی کمائی اور منمانی پیسے کی وصولی کے لئے پرائیویٹ پراکٹس میں زیادہ وقت لگانے اور جیل میں بس علاج کے نام پر کھانہ پور ی کرنے صحیح دوا نہ چلاکر غلط دوا چلانے سے قیدی کی کڈنی کو ختم کردیاگیا۔ اور صحیح جانچ کے ساتھ بڑھیاعلاج کے بنا قیدی کی موت ہوگئی۔ ضلع صدر نے ضلع مجسٹریٹ اور صحت محکمہ سے مطالبہ کی ہے کہ فورا ڈاکٹر کو معطل کیاجائے اور اعلیٰ سطحی جانچ کرائی جائے ۔ تاکہ متاثر خاندان کو انصاف مل سکے اور مستقبل میں اس طرح کے واردات دہرائی نہ جاسکے۔