دنیا بھر سے

عالمی عدالت ایران کے اثاثوں کی بحالی کادعویٰ مسترد کرے: امریکہ

Profile photo of Taasir Newspaper
Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 10-October-2018

ہیگ،(پی ایس آئی) امریکا نے ہیگ میں قائم عالمی عدالتِ انصاف کے ججوں سے کہا ہے کہ وہ ایران کے ایک ارب 75 کروڑ ڈالرز کے اثاثوں کو غیر منجمد کرنے کے دعوے کو مسترد کردیں۔امریکی عدالتوں کے حکم پر ایران کے قومی بنک کے ملکیتی یہ اثاثے منجمد کیے گئے تھے۔امریکی محکمہ خارجہ کے قانونی مشیر رچرڈ وائسک نے عالمی عدالت انصاف پر زور دیا ہے کہ ایران کی اثاثوں کی بحالی کی درخواست کو مسترد کردیا جائے۔ان کا کہنا تھا کہ ایران کے خلاف اقدامات اس کی جانب سے دہشت گردی کی حمایت کے پیش نظر کیے گئے ہیں۔امریکا کی عدالتِ عظمیٰ نے 2016ء میں ایک حکم دیا تھا کہ ایرا ن کے ضبط کیے گئے اثاثوں کو 1983 ء میں لبنان کے دارالحکومت بیروت میں امریکی میرین کی بیرکوں پر حملوں میں ہلاک ہونے والے فوجیوں کے خاندانوں اور دوسرے متاثرین میں تقسیم کیا جائے۔واضح رہے کہ عالمی عدالت انصاف میں زیر سماعت اس مقدمے کا ایران کے امریکی پابندیوں کے خلاف دائر کردہ مقدمے سے کوئی تعلق نہیں اور اس کی الگ سے سماعت کی جارہی ہے۔ایران نے ان دونوں کیسوں میں 1955ء میں امریکا کے ساتھ طے شدہ دوطرفہ معاہدہ امیٹی کے تحت دعویٰ دائر کیا تھا۔دونوں ممالک میں یہ معاہدہ ایران میں انقلاب سے 24 سال قبل طے پایا تھا۔اس انقلاب کے بعد امریکا اور ایران ایک دوسرے کے دشمن بن گئے تھے اور ان کے درمیان سفارتی تعلقات منقطع ہوگئے تھے۔امریکا نے گذشتہ ہفتے امیٹی معاہدے سے دستبردار ہونے کا اعلان کردیا تھا۔اس نے یہ اعلان عالمی عدالت انصاف کے اس حکم کے بعد کیا تھا جس میں امریکا سے کہا گیا تھا کہ وہ ایران کے خلاف پابندیوں کے نفاذ میں اس بات کو یقینی بنائے کہ اس سے انسانی امداد اور شہری ہوابازی کا تحفظ متاثر نہ ہو۔معاہدہ امیٹی سے امریکا کی علاحدگی کا عمل مکمل ہونے میں ایک سال کا وقت لگے گا۔اس دوران میں ایران کے عالمی عدالت انصاف میں اپنے اثاثوں کو غیر منجمد کرانے کے کیس کی سماعت جاری رہے گی۔ ایران نے 2016ء میں یہ کیس دائر کیا تھا۔امریکا ہیگ میں آیندہ جمعہ تک عالمی عدالت انصاف کے دائرہ اختیار پر اپنے اعتراضات پر مبنی دلائل جاری رکھے گا۔عدالت نے ابھی تک اس کیس کے فیصلے کی تاریخ مقرر نہیں کی ہے۔

About the author

Profile photo of Taasir Newspaper

Taasir Newspaper

Skip to toolbar