قانونی جنگ میں آمنے سامنے بی سی سی آئی وپی سی بی

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 02-October-2018

دبئی، (یو این آئی ) ہندوستانی کرکٹ کنٹرول بورڈ (بی سی سی آئی) اور پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) دبئی میں انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) کی تنازعہ تصفیہ کمیٹی کے سامنے قانونی جنگ میں اتریں گے ۔آئی سی سی کے ثالث تین دن کے اندر پی سی بی کے ہندستانی بورڈ پر لگائے الزامات پر سماعت کریں گے ۔ تین رکنی پینل میں مائیکل بیلوف، جان پلسن اور ڈاکٹر اینابیل بینٹ شامل ہیں۔قابل ذکر ہے کہ اپریل 2014 میں دونوں ممالک کے درمیان دو طرفہ کرکٹ سریز کرانے کو لے کر معاہدہ ہوا تھا۔ لیکن ہندستان اور پاکستان کے درمیان کشیدگی کی وجہ سے بی سی سی آئی نے دو طرفہ سریز کرانے سے انکار کر دیا۔ پی سی بی نے اس کے بعد گزشتہ نومبر بی سی سی آئی کے خلاف معاوضہ کا دعوی ٹھوک دیا۔آئی سی سی کی اس معاملے پر سماعت سے سابق پاکستانی بورڈ نے دوبارہ بی سی سی آئی سے قریب 447 کروڑ روپے کے معاوضے کا مطالبہ کیا ہے ۔ پی سی بی کا الزام ہے کہ دونوں ممالک کے درمیان دو طرفہ سریز منسوخ ہونے سے اس کو بڑا مالی نقصان اٹھانا پڑا ہے ۔ ہندستانی بورڈ نے دو بار پاکستان کے ساتھ دو طرفہ سریز کھیلنے سے انکار کیا ہے ۔ہندستان اور پاکستان کے درمیان معاہدے کے تحت 2015 سے 2023 کے درمیان چھ دو طرفہ سریز ہونی تھی۔ سال 2007 میں پاکستان کے ہندستان کے دورے کے بعد سے دونوں ممالک نے کوئی مکمل دو طرفہ کرکٹ سریز نہیں کھیلی ہے ۔ اس کے ایک سال بعد 2008 میں ممبئی پر پاکستان کے اعانت سے دہشت گردانہ حملے کے بعد سے دونوں ممالک کے تعلقات اور خراب ہو گئے تھے ۔ اگرچہ 2012 میں پاکستان نے ہندستان کا دورہ کیا تھا اور جامع ون ڈے سریز کھیلی تھی۔ دونوں دو بار ایشیا کپ میں بھی ایک دوسرے سے کھیل چکے ہیں۔پاکستان اور ہندستان کے درمیان ہر جانہ کیس کی تین روزہ سماعت پیر سے دبئی میں شروع ہورہی ہے ۔ آئی سی سی تقریباً پانچ سو کروڑ روپے کے ہرجانہ کیس کی سماعت کرے گی۔ حیرت انگیز طور پر پی سی بی کے سابق سربراہ نجم سیٹھی اس کیس کو جیتنے کا دعویٰ کرچکے ہیں ۔واضح رہے کہ پاکستان نے ہندستان پر باہمی کرکٹ سیریز کھیلنے کے لئے مفاہمتی یاد داشت کے سمجھوتے پر عمل نہ کرنے کی وجہ سے آئی سی سی میں زر تلاقی کیلئے رجوع کیا تھا۔