مودی حکومت میں ملک کی معیشت چوپٹ ہوگئی: آنند شرما

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 15-October-2018

نئی دہلی، (یو این آئی) کانگریس کے سینئر لیڈر آنند شرما نے الزام لگایا ہے کہ مودی حکومت اپنی کامیابیوں پر لوگوں کو گمراہ کر رہی ہے اور اس کے غلط فیصلوں کی وجہ سے ملک کی معیشت مکمل طورپر چوپٹ ہوگئی ہے۔ مسٹر آنند شرما نے اتوار کو یہاں ایک پریس کانفرنس میں کہا کہ گزشتہ ساڑھے چار سال میں معیشت میں کافی گراوٹ درج کی گئی ہے۔ کسی بھی معیشت کے لئے جو معیار ہوتا ہے، اس میں کمی آئی ہے۔ ملک میں پرائیویٹ اور سرکاری شعبے میں سرمایہ کاری مسلسل کم ہوئی ہے۔ لوگوں کی بچت کی شرح میں تقریبا چھ فیصد کمی آئی ہے۔ نئی صنعتیں نہیں لگائے جانے سے صنعتی ترقی کی شرح صفر کے نیچے ہے اور پٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں مسلسل اضافہ حکومت کی ناکامی کا ثبوت ہے۔ انہوں نے کہا کہ ترقی پسند اتحاد حکومت ملک کی معیشت کو جس مقام پر چھوڑی تھی وہ اس سے کافی نیچے آ گئی ہے۔ عالمی اقتصادی بحران کے وقت میں بھی منموہن سنگھ حکومت نے معیشت کو ہموار طریقے سے رفتار دینے میں کامیاب رہی تھی۔ مسٹر آنند شرما نے کہا کہ سابقہ حکومت کے دس سال کی مدت میں اوسط قومی شرح ترقی (جی ڈی پی) 7.8 فیصد ریکارڈ کی گئی تھی۔ ملک کی جی ڈی پی میں ایک دہائی میں چار گنا اضافہ ایک تاریخی حصولیابی تھی لیکن موجودہ حکومت میں جی ڈی پی 7.1 یا 7.2 ریکارڈ کی گئی ہے۔ اس حکومت کے دوران بینک کمزور ہوئے ہیں اور ان کی غیر منفعتی پراپرٹی (این پی اے) 11 کروڑ لاکھ سے اوپر ہو گئی ہے۔ ملک میں مسلسل روزگار کے مواقع گھٹ رہے ہیں۔کانگریس لیڈر نے کہا کہ ملک کا مالی خسارہ مسلسل بڑھ رہا ہے۔