نئی اوپننگ جوڑی کی تلاش میں ہے ٹیم انڈیا

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 02-October-2018

نئی دہلی، (یو این آئی ) مرلی وجے کے دورہ انگلینڈ کے درمیان باہر کئے جانے اور شکھر دھون کے ویسٹ انڈیز کے خلاف سریز شروع ہونے سے پہلے ٹیسٹ ٹیم کے باہر کئے جانے کے بعد دنیا کی نمبر ایک ٹیسٹ ٹیم ہندستان کو اب ایک نئی اوپننگ جوڑی کی تلاش ہے ۔ہندستان کو انگلینڈ میں پانچ ٹسٹ میچوں کی سیریز میں 1-4 سے شکست کا سامنا کرنا پڑا تھا اور اس سیریز کے دوران ہندستان کو اوپننگ میں کئی تجربات کئے لیکن کامیابی ہاتھ نہیں لگی۔ وریندر سہواگ اور گوتم گمبھیر کی کامیاب اوپننگ جوڑی کے بعد گزشتہ تقریبا آٹھ سال میں ہندستان نے مسلسل کوشش کی ہے لیکن اس کے اوپننگ میں ایک مستحکم جوڑی نہیں مل پائی ہے ۔قومی سلیکٹرز نے ویسٹ انڈیز کے خلاف چار اکتوبر سے راجکوٹ میں شروع ہو نے والی دو ٹسٹ میچوں کی سیریز کے لیے اوپنر شکھر کو ٹیم سے باہر کر دیا ہے جبکہ انتخاب سے 24 گھنٹے پہلے ختم ہوئے ایشیا کپ میں شکھر سب سے زیادہ رن بنانے کی بدولت مین آف دی ٹورنامنٹ بنے تھے ۔ یہ حیرت کی بات ہے کہ کوئی کھلاڑی ہندستان کی خطابی جیت میں مین آف دی ٹورنامنٹ بنتا ہے لیکن اگلے ہی دن اسے ٹیسٹ ٹیم سے باہر کا راستہ دکھا دیا جاتا ہے ۔اوپنر وجے کو انگلینڈ کے خلاف تیسرے ٹیسٹ کے بعد باقی دو ٹسٹ میچوں کے لئے چنی گئی ٹیم سے باہر کر دیا گیا تھا۔ ٹیم میں اوپننگ کیلئے ممبئی کے 18 سال کے بلے باز پرتھوی شا ہ کو شامل کیا گیا ہے جو سلامی بلے بازی میں لوکیش راہل کے جوڑی دار کے طور پر اتریں گے ۔ اگرچہ راہل کا انگلینڈ میں اوپننگ میں بلے بازی کارکردگی کوئی بہت عمدہ نہیں رہی تھی۔ لیکن پانچویں ٹیسٹ کی دوسری اننگز میں وہ 149 رنز بنا کر ٹیم میں اپنی جگہ بچا گئے ۔سیریز کے پانچویں میچ میں راہل نے شکھر کے ساتھ اوپننگ کی تھی جس میں پہلی اننگز میں راہل نے 37 اور شکھر نے تین رن بنائے تھے ۔ دوسری اننگز میں راہل نے 149 اور شکھر نے ایک رن بنائے ۔ اس سے پہلے چوتھے ٹیسٹ میں شکھر اور راہل نے بالترتیب 23 اور 19 اور 17 اور 0 رن بنائے تھے ۔ تیسرے ٹیسٹ میں شکھر نے 35 اور راہل نے 23 اور دوسری اننگز میں شکھر نے 44 اور راہل نے 36 رن بنائے ۔پہلے ٹیسٹ میں وجے نے 20 اور چھ رن جبکہ شکھر نے 26 اور 13 رنز بنائے ۔ دوسرے ٹیسٹ میں وجے نے ڈبل صفر اور راہل نے آٹھ اور 10 رن بنائے ۔ راہل کی مکمل سیریز میں کارکردگی مایوس کن تھی لیکن آخری ٹیسٹ کے 149 رنز نے انہیں ٹیسٹ ٹیم میں برقرار رکھا۔ہندستان کو اس سال جنوری میں جنوبی افریقہ کے دورے میں بھی اپنی اوپننگ جوڑی سے پریشانی اٹھانی پڑی تھی۔ ہندستان نے وجے اور شکھر کو مسلسل آزمایا لیکن دونوں بلے باز ناکام رہے ۔ ہندستان نے یہ سریز 1-2 سے گنوائی۔ پہلے ٹیسٹ میں مرلی نے 1 اور 13 اور شکھر نے 16 اور 16 رنز بنائے ۔ اوپننگ شراکت 16 اور 30 رنز کی رہی۔ہندستان یہ میچ 72 رنز سے ہار گیا۔