نتیش نے کیا دیہی ٹرانسپورٹ پروجیکٹ کاافتتاح،اب دیہی سڑکوں پربھی روزگار

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 10-October-2018

پٹنہ(اسٹاف رپورٹر) :وزیر اعلیٰ نتیش کمار نے آج وزیر اعلیٰ سیکریٹرٹ واقع سنواد میں ٹرانسپورٹ محکمہ کے ذریعہ منعقد پروگرام کاشمع روشن کر کے افتتاح کیا ۔اورریمورٹ کنٹرول کے توسط سے ’وزیر اعلیٰ دیہی ٹرانسپورٹ پروجیکٹ‘‘ کا افتتاح کیا ۔ اس موقع پر پروگرام کو خطاب کر تے ہوئے وزیر اعلیٰ ہے کہا کہ محکمہ ٹرانسپورٹ کو اس بات کے لیے مبارک باد دیتا ہوں کہ 15 اگست کے دن جس منصوبہ کا اعلان میں نے کیا تھا اس پر عملدرآمد آج سے شروع کر دیا گیا ہے ۔ پائیلٹ پروجیکٹ کی شکل میں دو اضلاع سمستی پور اور نالندہ کے ایک ایک گرام پنچایت میں یہ لاگو کیا گیا ہے اور آج 09 مستفیضوں میں گاڑی تقسیم کی گئی ہے ۔ چیف سیکریٹری میرے ذریعہ اعلان منصوبہ کی سختی سے مانیٹرنگ کر رہے ہیں ، جس کے سبب کم مدت میں ہی ان منصوبوں کا افتتاح کیاسکا ہے ۔ ’’وزیر اعلیٰ گرام ٹرانسپورٹ منصوبہ‘‘کی شروعات باپو کی سالگرہ کے دن محکمہ کرنا چاہ رہا تھا، لیکن میں نے کہا کہ دوسرے دن اس منصوبہ کی شروعات کی جائے، تاکہ لوگوں کو تفصیل سے اس کے بارے میں جانکاری مل سکے ۔باپو کی سالگرہ کے دن ہم لوگ باپو کے افکار کے بارے میں بھی بات کر تے ہیں ۔ اس منصوبہ کی شروعات پر خوشی ظاہر کر تے ہوئے وزیر اعلیٰ نے کہا کہ اس منصوبہ کے تحت گاڑیوں کو پنچایت سے بلاک ہیڈ کوارٹر تک چلانے کے لیے ہر پنچایت کے لیے 5گاڑیوںکی خرید اری پر گاڑی کی خرید قیمت پر 50 فیصد تک کی رقم اور زیادہ سبسڈی کا خاکہ محکمہ ٹرانسپورٹ کے ذریعہ ادا کیا جائے گا ۔ 5مستفیضوں میں 3 ایس سی اور ایس ٹی کے ہوں گے دو مستفض انتہائی پسماندہ طبقہ کے ہوں گے ۔وزیر اعلیٰ نے کہا کہ جب ہم عوامی نمائندہ اور مرکز میں وزیر تھے اس وقت بھی لوگوں سے حلقہ میں ملنے جانے کے لیے بہت پیدل چلنا پڑتا تھا ۔آپ سمجھ سکتے ہیں کہ اس وقت ریاست میں سڑک کی سہولت کی کیا حالت تھی ۔ سال 2005 کے بعد سے سڑکوں کی تعمیرمیں نے بڑے پیمانے پر کرا یا ہے ۔ ہر گائوں کو تقریبا پختہ سڑک سے جوڑ دیاگیا ہے ۔ ٹولہ رابطہ منصوبہ کے تحت ہر ٹولے کو پختہ سڑک سے جوڑا جا رہا ہے ۔ اچھی سڑک کی تعمیر کے بعد لوگ پیدل چلنا کم چاہتے ہیں ۔ اسی کو ذہن میں رکھتے ہوئے دور دراز دیہات میں رہنے والے لوگوں کو بلاک تک جانے کے لیے اس منصوبہ کی شروعات کی گئی ہے ۔ 4 سے 10 لوگوں تک کی صلاحیت والی یہ گاڑی ہو گی ۔ اب سڑک کی تعمیر کے ساتھ ساتھ سڑکوں کے مینٹننس کے لیے سرکار نے پالیسی بنائی ہے ۔ یہ مینٹننس پالیسی تمام دیہی سڑکوں پر بھی لاگو ہو گی ۔وزیراعلیٰ نے کہا کہ وزیر اعلیٰ گرام پرٹرانسپورٹ منصوبہ کے تحت گاڑی کی شکل میں ای رکشا کو بھی شامل کر نا چاہئے ۔یہ کم فاصلہ کے لیے مناسب ہے ۔ ساتھ ہی ماحول کے بھی مطابق ہے ۔وزیر اعلیٰ نے کہا کہ رورل ڈیولپمنٹ محکمہ کے ذریعہ چلائے جارہے ’مسلسل روزگار منصوبہ‘ کے تحت جیویکا گروپ کے ذریعہ ویسے کنبوں کا مسلسل سروے کرا یا جا رہا ہے ، جو حاشیہ پر ہیں اور انہیں کسی منصوبہ کی جانکاری بھی نہیں ہے اور اس کافائدہ بھی انہیں نہیں مل پارہا ہے ۔ جو غریب کنبہ شراب چلائی کے کام سے منسلک تھا، ان کے متبادل روزگار کے لیے ساتھ ہی ویسے حاشیہ پرکھڑے ویسے کنبوں کے لیے بھی ’گو پلان ای رکشہ ‘دکان کا کارو بار وغیرہ کا انتظام جو ان کے لیے سہولت کا ہو، کیا جا رہا ہے ۔وزیر اعلیٰ نے کہا کہ پٹنہ یوینورسٹی کے لیے بس سروس کی شروعات کی گئی ہے ۔ پٹنہ میں مختلف روٹ کے لیے بس سروس شروعا کی گئی ہے ۔ گیا میں کچھ روٹوں پر بس سروس شروع کی گئی ہے ۔ ٹرانسپورٹ محکمہ نے ایک شہر سے دوسرے شہر کو جوڑنے کے لیے بس سروس کی شروعا ت کی کئی ہے ۔ بس مسافروں کی سہولت کے مطابق ہے ۔ انہوں نے کہا کہ محکمہ ٹرانسپورٹ کے ذریعہ نئی تکنک کے تجربہ کا فائدہ عام لوگوں کو دینے کے مقصد سے آن لائن گاڑی پرمٹ سٹی بس سروس کے لیے موبائل ایپ ، آر ٹی اے کا ایکسٹنشن وغیرہ کی شروعا کی گئی ہے ۔ اس سے گاڑیوں کے رجسٹریشن ، خریداری میں سہولت ہو گی ، نئی تکنیک کے استعمال سے محکمہ ٹرانسپورٹ میں زیادہ شفافیت سے اور تیزی سے کام ہو گا ۔وزیر اعلیٰ نے کہا کہ ریاست میں گاڑیوں کی فروخت میں اضافہ ہوا ہے اور ملک میں سب سے زیادہ موٹر سائیکل کی فروخت بہار میں ہو تی ہے ۔ لوگوں کی آمدنی بڑھی ہے ۔ شراب بندی کے بعد جو لوگوں کی بچت ہوئی ہے اس کا استعمال بہتر زندگی کے لیے لوگ کررہے ہیں ۔ ریاست میں مہذب طریقہ سے کام کر کے ترقیات کو رفتار دی جارہی ہے ۔ جیسا کہ محکمہ ٹرانسپورٹ نے جانکاری دی ہے کہ آئندہ سال جولائی تک بس اسٹینڈ بن کر تیار ہو جائے گا ۔ محکمہ ٹرانسپورٹ دیگر اضلاع کے بس اسٹینڈ کو بھی درست کریں ۔ اپنے تمام بس اسٹینڈ کو سہولت سے لیس اور جدید طریقہ کا بنائیں ۔ وزیر اعلیٰ نے کہا کہ ہر گرام پنچایت میں ایک بس اسٹاپ کی تعمیر ہو اور ہر بلاک ہیڈ کوارٹر میں ماڈل بس اسٹینڈ کی تعمیر کرائی جائے تاکہ گاڑی چلانے میں سہولت ہو ۔ وزیر اعلیٰ نے کہا کہ موجود ہ وقت میں ڈرائیونگ کے شعبہ میں حادثات ایک اہم مسئلہ بن کر ابھرا ہے ۔ریاست میں شراب بند کے بعد حادثہ میں کمی آئی ہے ۔ عمدہ سڑکوں کی تعمیر کے بعد گاڑیوں کی تعداد میں اضافہ ہوا ہے ۔ تیز رفتار اور لاپر وائی سے گاڑی چلانے کے سبب بھی حادثہ ہو تا ہے ۔ لوگ زیبرا کراسنگ پر بھی رکنا نہیں چاہتے ہیں ، اس کو یقینی کریں ۔ ہیلمیٹ کا استعمال گاڑی چلاتے وقت ضرور کر نا چاہئے ۔ بڑی گاڑیوں کے سب بائیں طرف چلنا چائے ، لیکن ان تمام چیزوں پر توجہ نہیں دی جاتی ہے ۔ ٹرانسپورٹ میں سیکورٹی کے لیے قومی سطح پر پالیسی بنائی گئی ہے ، ساتھ ہی سڑک سیکورٹی کے لیے ڈیولپمنٹ کمشنر کی صدارت میں ایک کمیٹی تشکیل کی گئی تھی ، جس میں گھنی آبادی والے علاقوں میں سڑک پار کر نے کے لیے فوٹ اوور برج ، انڈر گرائونڈ سڑک وغیرہ کی تعمیر کرائی جانی ہے ۔ یہ اس طرح کی بنائی جائے کہ سڑک کو پار کر نے میں معذور لوگوں اور مویشیوں کو کسی طرح کی دشوار نہ ہو ،ساتھ ہی ایگریکلچر کے کام سے جڑے ہوئے دیہی علاقہ کے لوگو ں کو ذراعتی پیداوار لے جانے میں سہولت ہو۔وزیر اعلیٰ نے کہا کہ لوگو میں نظم و ضبط اور سماجی بیداری پیداکر نے کی ضرورت ہے ،تاکہ سڑک کی سیکورٹی کے تئیں لوگ ہوشیار ہوں ۔ڈرائیور سے لے کر تمام لوگوں کو ٹریفک کے ضابطہ پر عمل کے لیے بیدار کر نا ہو گا ۔وزیر اعلیٰ نے کہا کہ ترقیات کے ساتھ ساتھ نئی چیزیں ابھر تی ہیں اس کے لیے ہوشیار رہنے کی ضرورت ہے ۔ صرف اسٹرکچر تعمیر کر لینے سے کام پورا نہیں ہو تا ، بلکہ اس کے لیے ’ واچفل‘بھی ہو نے کی ضرورت ہے ۔محکمہ ٹرانسپورٹ ان تمام چیزوں پر نگاہ ر کھے گا ۔وزیر اعلیٰ نے کہا کہ ریاست میں 8ہزار س زیادہ گرام پنچایت ہیں ۔ ایک گرام پنچایت میں پانچ گاڑیوں کی تقسیم کی جائے گی ۔یعنی 40ہزرا سے زائد لوگوں کو اس کا فائدہ ملے گا ۔ لوگوں کو روزگار تو ملے گاہی ساتھ ہی آمدورفت کی سہولت میں بھی اضافہ ہو گا ۔ ٹرانسپورٹ محکمہ کا دائرہ بڑھا ہے جس کے سبب اس کی ذمہ داری بھی بڑھی ہے ۔ مجھے پوری امید ہے کہ محکمہ ٹرانسپورٹ لوگوں کی خواہشات اور توقعات پر پورا اترے گا ۔ اس موقع پر وزیر اعلیٰ نے محکمہ ٹرانسپورٹ کے ذریعہ لگائی گئی گاڑی کی نمائش کا معائنہ کیا ۔ وزیر اعلیٰ کا خیر مقدم محکمہ ٹرانسپورٹ کے سیکریٹری جناب سنجے کمار اگر وال نے گرین گلدستہ دے کر کیا ۔ پروگرام کے دوران وزیر اعلیٰ نے آن لائن گاڑی پرمٹ آر ٹی اے کا ایکسٹنشن،سٹی بس سے متعلق موبائل ایپ کا ریمورٹ کے توسط سے افتتاح کیا ۔ محکمہ ٹرانسپورٹ کے ذرریعہ تیار کی گئی ڈیکومینٹری فلم کی نمائش کی گئی ۔ وزیر اعلیٰ اور دیگر بڑی شخصیتوں نے محکمہ ٹرانسپورٹ کے ایک بکلیٹ ’’ہر سفر کا ہمسفر‘‘کا اجرا کیا ۔ سمستی پور اور نالندہ ضلع کے 09مستفیضوں کو وزیر اعلیٰ نے گاڑی تقسیم کی ۔پروگرام کو نائب وزیر اعلیٰ جناب سشل کمار مودی ، محکمہ ٹرانسپورٹ کے وزیر سنتوش کمارنرالا، چیف سیکریٹری جناب دیپک کمار ، محکمہ ٹرانسپورٹ کے سیکریٹری جناب سنجے کمار اگر وال نے بھی خطاب کیا ۔