نصاب تعلیم میں اخلاقیات کا درس شامل کرنا ضروری: ایس کے سنگھ

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 10-October-2018

دربھنگہ :(عبدالمتین قاسمی )عہدِحاضر میں بین الاقوامی سطح پر یہ فکر مندی ظاہر کی جا رہی ہے کہ تعلیمی اداروں سے تعلیم یافتہ طلباء محض ڈگری لے کر نکل رہے ہیں اور ملازمت ہی ان کے لئے نصب العین بن گیاہے ۔نتیجہ کے طور پر وہ اخلاقی قدروں سے عاری ہوتے جا رہے ہیں۔ اس لئے تعلیمی اداروں میں اخلاقیات کی تعلیم اور نصاب میں اسے شامل کئے جانے کی اشد ضرورت ہے ۔مذکورہ باتیں پروفیسر سریندر کمار سنگھ (وائس چانسلر للت نرائن متھلا یونیورسٹی دربھنگہ )نے کہی۔ پروفیسر سنگھ مقامی سی ایم کالج دربھنگہ میں ’’فلسفۂ تعلیم میں اخلاقی قدروں کی عصری معنویت ‘‘پرمنعقد قومی سیمینارکے افتتاحی اجلاس سے خطاب کر رہے تھے۔ پروفیسر سنگھ نے کہا کہ تعلیم کا مقصد انفرادی فروغ نہیں ہے بلکہ اجتماعی ذمہ داریوں کا احساس اور سماجی فلاح کے لئے کام کرنا ہے اور اس کے لئے ضروری ہے کہ ہم اپنے بچوں کو اخلاقی تعلیم سے آراستہ کریں اور ان کے اندر یہ جذبہ پیدا کریں کہ وہ اپنے خاندان، سماج اور ملک وقوم کے لئے بھی تعمیری فکر کے ساتھ کام کریں۔اگر ہمارے طلباء کے اندر یہ جذبہ پیدا ہوتا ہے تو خود بخود معاشرے کی اصلاح ہوگی اور آج سماج جس بحرانی کیفیت سے دوچار ہے اس سے ہم نجات پا سکیں گے ۔مہمانِ اعزازی کرنل نشیتھ کمار رائے (رجسٹرار) نے کہا کہ کالج میں پڑھنے والے طلباء کو سب سے پہلے فرض شناسی سے آشنا کیجئے پھر اس کو اپنے حقوق سے آگاہ کیجئے ، اگر وہ اپنے فرائض سے آشنا ہو جائیں تو خود بخود ان کے اندر اخلاقیاتی عنصر پیدا ہوجائیں گے۔ پروفیسر اروند سنگھ نے کہا کہ عدم اخلاقیات کی وجہ سے ہم انسانی ہمدردی سے بھی دو ر ہوتے جا رہے ہیں ۔ آج سماج میں جس طرح کی بے چینی ہے اس کا علاج صرف اور صرف اخلاقی تعلیم کے ذریعہ ممکن ہے ۔ اپنی صدارتی تقریر میں ڈاکٹر مشتاق احمد( پرنسپل کالج ہذا) نے کہا کہ تعلیمی اداروں میں جب تک اساتذہ خود ایک مثالی کردارکے حامل نہیں بنیں گے اس وقت تک ان کی تقریر وتحریر کا اثر طلباء پر نہیں ہو سکتا ہے۔ اس لئے ضرورت اس بات کی ہے کہ ہم اساتذہ بھی اپنا احتسابی جائزہ لیں کہ کیا ہم اپنے فرائض کی انجام دہی میں ایماندار ہیں ۔ سیمینار میں پروفیسر آئی این سنہا( پٹنہ)، پروفیسر شیامل کشور (پٹنہ)، پروفیسر ناگندر مشرا ( پٹنہ)، پروفیسر فیض احمد مانو(حیدر آباد۔ شاخ دربھنگہ) ، ڈاکٹر سنجے سہنی، پروفیسر اندرا جھا ، پروفیسر نرائن جھا ڈاکٹر رودر کانت امر وغیرہ نے سیمینار کے موضوع پر عالمانہ مقالہ پیش کیا ۔ جلسہ کے آغاز میں مہمانوں کا شال اور پودوں کے ذریعہ استقبال کیا گیا ۔ جلسہ کی نظامت ڈاکٹر اندرا جھا نے کی جب کہ کلماتِ تشکر ڈاکٹر راجیو کمار نے پیش کیا ۔ اس موقع پر این ایس ایس اور این سی سی کے طلباء وطالبات نے معزز وائس چانسلر کو گارڈ آف آنر پیش کیا ۔ کالج احاطے میں بطور یادگار پروفیسر سریندر کمار سنگھ وائس چانسلر ، کرنل نشیتھ کمار رائے ، رجسٹرار، ڈاکٹر مشتاق احمد پرنسپل اور دیگر مہمانوں نے شجر کاری کی اور ایک درجن آم اورپھولوں کے درخت لگائے گئے۔اس موقع پر کالج کے طلباء وطالبات کے علاوہ کثیر تعداد میں لوگ شامل تھے ۔