نوٹ بندی کے بعد بینکوں کے 3.16لاکھ کروڑ ڈوبے:راہل

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 02-October-2018

نئی دہلی ،(سید شمیم احمد)کانگریس کے صدر راہل گاندھی نے الزام لگایا ہے کہ مودی حکومت کے نوٹوں کی منسوخی کے فیصلے سے عام آدمی کے سامنے بڑا بحران کھڑا ہوا تھا جبکہ صنعت کاروں کے لئے یہ کالی کمائی کو سفید کرنے کا موقع تھا اور اس کھیل میں بینکوں کے 3.16لاکھ کروڑ روپے ڈوبے ہیں۔مسٹر گاندھی نے پیر کو ٹویٹ کیا،عام آدمی کےلئے نوٹوں کی منسوخی لائن میں لگنا ،اپنا پیسہ بینک میں قیدرکھنا،اپنی پوری تفصیل آدھار میں دینا تھا لیکن اسے اپنےلئے استعمال کرنا منع تھا۔صنعت کاروں کےلئے نوٹوں کی منسوخی اپنا سارا کالا پیسہ سفید کرنے کا موقع تھا۔بعد میں بینکوں نے 3.16لاکھ کروڑ روپے کا نقصان اٹھایا۔اس کے ساتھ ہی کانگریس کے صدر نے ایک انگریزی اخبار میں شائع خبر بھی پوسٹ کی ہے جس میں بینک کی رپورٹ کے حوالےسے کہا گیا ہے کہ اپریل 2014سے اپریل 2018 کے درمیان بینکوں نے وصول کئے گئے قرض کے مقابلے سات گنا پیسہ کا خسارہ جھیلا جس سے عوام کے 3.16لاکھ کروڑروپے ڈوب گئے۔