دنیا بھر سے

امریکا کی حمایت یافتہ شامی فورسز کی ترکی کے حملوں کے بعد داعش مخالف مہم معطل

Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 02-November-2018

مشرقی شام،(پی ایس آئی)شام کے مشرقی علاقے میں کرد ملیشیا کے زیر قیادت امریکی اتحاد کی حمایت یافتہ شامی جمہوری فورسز ( ایس ڈی ایف) نے داعش کے خلاف جاری مہم معطل کردی ہے۔اس نے یہ فیصلہ شام کے شمالی علاقے میں کرد ملیشیا کے ٹھکانوں پر ترکی کی مسلح افواج کی گولہ باری کے بعد کیا ہے۔عرب اور کرد مسلح گروپوں پر مشتمل شامی جمہوری فورسز نے بدھ کو ایک بیان میں کہا ہے کہ مشرقی شام میں داعش کے خلاف 10 ستمبر سے جاری فوجی کارروائی کو عارضی طور پر معطل کیا جارہا ہے۔ اس نے ترکی کے ’’ اشتعال انگیز‘‘ حملوں کی مذمت کی ہے۔ترکی کی مسلح افواج نے اس ہفتے شام کے شمال میں دریائے فرات کے مشرقی کنارے میں واقع علاقے میں کرد ملیشیا وائی پی جی کے ٹھکانوں پر بمباری کی ہے۔ترکی کی سرکاری خبررساں ایجنسی اناطولو کے مطابق ان حملوں میں شام کے شمالی علاقے عین العرب کے مغرب میں واقع زور مگر میں کرد ملیشیا کے ٹھکانوں کو نشانہ بنایا گیا ہے اور ان حملوں کا مقصد کرد ملیشیا کی دہشت گردی کی سرگرمیوں کی روک تھام تھا۔ترک فوج نے قبل ازیں شام کے علاقے عفرین میں اس سال کے اوائل میں وائی پی جی کے خلاف حملہ کیا تھا۔ ترک لیڈر کئی مرتبہ اس بات کا اعادہ کر چکے ہیں کہ ان کی فوج دریائے فرات کے مشرقی کنارے کے علاقے میں وائی پی جی کے جنگجوؤں کو نشانہ بنائے گی۔

About the author

Taasir Newspaper