ہندستان ہندوستان

دیوالی کے پٹاخوں نے دہلی کی ہوا کو مزید زہریلا بنایا

Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 09-November-2018

نئی دہلی،(سید شمیم احمد): قومی دارالحکومت دہلی سمیت ملک بھر میں دیوالی کا تہوار بڑی دھوم دھام سے منایا گیا۔ اس دوران ہوئی آتشبازی کا اثر ہوا کے معیار پر ہوا ۔ جمعرات کی صبح پوری دہلی اسماگ میں لپٹی نظر آئی۔ دہلی کے زیادہ تر علاقوں میں فضائی معیار کی سطح (اے کیو آئی) ایک ہزار کے قریب پہنچ گیا جو کہ ‘انتہائی خراب’ زمرہ کے قریب ہے۔دہلی اور قومی دارالحکومت علاقہ (این سی آر) میں آلودگی خطرناک سطح پر ہے۔ دیوالی پر آتش بازی کی وجہ سے آلودگی کی سطح اور زیادہ بڑھ جاتی ہے۔ آلودگی کنٹرول کرنے کے لئے سپریم کورٹ نے ملک بھر میں 8 سے 10 بجے کے درمیان پٹاخے جلانے کی اجازت دی تھی، تو دہلی این سی آر میں گرین پٹاخے چلانے کی اجازت دی تھی۔ لیکن دہلی میں شام 6 بجے سے لوگوں نے آتش بازی شروع کر دی اور رات 10 بجے کے بعد بھی آتش بازی ہوتی رہی۔کورٹ کے احکامات پر عمل در آمد کرانے کی ذمہ داری دہلی پولیس کو دی گئی تھی، لیکن پولیسکی کارروائی کہیں بھی اثر دار نہیں نظر آئی۔ مشرقی دہلی میں بھی لوگوں نے کورٹ کے حکم کے باوجود جم کر پٹاخے جلائے۔ مجموعی طور پر دہلی میں سپریم کورٹ کے حکم کا کوئی اثر نہیں نظر آیا۔دہلی نے جمعرات کی صبح سال کے بدترین ہوا کے معیار اے کیو آئی درج کی۔ صبح 6 بجے پوری دہلی کی اوسط اے کیو آئی 805 درج کی گئی۔ مشرقی دہلی کے آنند وہار، شاہدرہ، پٹپڑگج اور میجر دھیان چند اسٹیڈیم میں اے کیو آئی 999 وہیں چانکیہ پوری میں 459 درج کی گئی۔ دہلی کے لٹینس زون کی بات کریں تو راج پتھ صبح اسماگ میں لپٹا نظر آیا۔

About the author

Taasir Newspaper