سیاست سیاست

نوٹ بندی ایک سفاکانہ سازش : راہل

Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 09-November-2018

نئی دہلی،(یو این آئی) نوٹ بندی کے دو سال مکمل ہونے پر کانگریس صدر راہل گاندھی نے نوٹ بندی کو سفاکانہ سازش قرار دیتے ہوئے جمعرات کو کہاکہ یہ اصل میں وزیراعظم نریندر مودی کے سوٹ۔ بوٹ والے دوستوں کی بلیک منی کو سفید کرنے کا منصوبہ تھا۔مسٹر گاندھی نے ٹوئٹر پر کہاکہ نوٹوں کی منسوخی سوچ سمجھ کر کی گئی سفاکانہ سازش تھی۔ یہ گھپلہ وزیراعظم کے سوٹ بوٹ والے دوستوں کی بلیک منی کو سفید کرنے کی اسکیم تھی۔ اس معاملہ میں کچھ معصوم نہیں تھا۔ اس کا کوئی دوسرا مطلب نکالنا قوم کی سمجھ کی توہین ہے۔سابق مرکزی وزیر خزانہ اور سینئر کانگریسی لیڈر پی چدمبر م نے نوٹ بندی کیلئے مرکزی حکومت کی سخت تنقید کرتے ہوئے کہا کہ نوٹ بند ی کا فیصلہ بدنیتی پر مبنی ڈیزائن اور منی لانڈرنگ اسکیم کا حصہ تھا۔پی چدمبرم نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ نوٹ بندی کی وجہ سے ملک میں جعلی نوٹوں کا معاملہ ختم نہیں ہوا ہے اور نہ ہی کالے دھن پر روک لگی ہے۔اب حکومت ریزروبینک انتخابی سال میں اخراجات کیلئے روپے مانگ رہی ہے۔انہوں نے کہا کہ اگر ریزرو بینک کے گورنر نے استعفیٰ دیدیا یا پھر حکومت من مانے طریقے سے ریزرو بینک سے روپے حاصل کرلیا تو اس کے نقصانات کیا ہوں گے حکومت کو معلوم نہیں ہے۔پریس کانفرنس میں سابق وزیر خزانہ نے کہا کہ ملک میں حالات بہت ہی خراب ہے حکومت کی غیر حکمت اور بدنیتی پر مبنی معاشی پالیسی کی وجہ سے ملک کی معیشت سب سے خراب دور سے گزررہی ہے۔پی چدمبرنے کہا کہ حکومت چاہتی ہے کہ سیکشن 7کا استعمال کرکے ریزروبینک سے ایک لاکھ کروڑ روپے حاصل کرلے۔ان حالات میں ریزرو بینک کے گوورنر کے سامنے دو اختیارات ہیں یا وہ استعفیٰ د ے کر علاحدہ ہوجائیں یا پھر ریزروبینک کی خودمختاری بچانے کیلئے ہر ممکن اقدامات کرے۔انہوں نے کہا کہ حکومت مرکزی بینک بورڈ کی میٹنگ میں ہنڈی کیپ نامزد نمائندوں کے ذریعہ اپنی بات منوانے کی کوشش کرے گی۔آر بی آئی بورڈ کی میٹنگ 19نومبر کو ہونے ہیں۔مودی حکومت مالی بحران کی شکار ہے۔اچھے دن آئیں اور ہمہ جہت ترقی کے نعرے کھوکھلے ثابت ہوچکے ہیں۔یہاں صرف ہندتو ا ایجنڈے کی گونج ہے اور یہ لوگ اس وقت صرف اور ہندتو اور سماج و معاشرہ کو تقسیم کرنے سے متعلق بات کرتے ہیں۔انہوں نے کہاکہ کرناٹک کے حالیہ ضمنی انتخابات نے صاف کردیا ہے کہ اپوزیشن اتحاد کے ذریعہ مودی حکومت کو ختم کیا جاسکتا ہے اور کانگریس اس کیلئے ہرممکن کوشش کرنے کو تیار ہے۔

About the author

Taasir Newspaper