سیاست سیاست

نوٹ بندی تغلقی فرمان،خمیازہ بھگت رہے ہیں عوام:آنند شرما

Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 09-November-2018

نئی دہلی،(یواین آئی) وزیراعظم نریندر مودی کی نوٹ بندی کوتغلقی فرمانقرار دیتے ہوئے کانگریس نے جمعرات کو کہاکہ اس اقدام سے کوئی اعلان کردہ مقصد حاصل نہیں ہوا اور عوام اس کا خمیازہ ابھی تک بگھت رہے ہیں۔کانگریس ترجمان آنند شرما نے یہاں پارٹی ہیڈکوارٹر میں پریس کانفرنس میں کہاکہ نوٹ بندی کو آج دو سال پورے ہوگئے لیکن اس کے اعلان کردہ مقاصد میں سے ایک بھی حاصل نہیں ہوا۔مسٹر مودی نے کالا دھن ختم کرنےکے مقصد کے ساتھ 500 اور 1000روپے کے نوٹوں کا استعمال آٹھ نومبر 2016سے بند کرنےکا اعلان کیا تھا۔یہ ایک طرح کا تاناشاہی فیصلہ تھا جس میں مرکزی کابینہ اور ریزرو بینک آف انڈیا کے بورڈ کو مبینہ طورپر ‘حراست ‘ میں لے لیا تھا۔نوٹ بندی کے فیصلہ کو ‘تغلقی فرمان قرار دیتے ہوئے انہوں نے کہاکہ اسے نافذ کرتے وقت عوام کی تکلیفوں اور بنیادی حقیقت کو نظر میں نہیں رکھاگیا۔اس اچانک فیصلے سے کروڑوں لوگوں کو بڑی مشکلات کا سامنا کرنا پڑا ۔قطاروں میں لگنے ،دھکم پیل اور افراتفری کے نتیجہ میں ایک سو سے زیادہ لوگ مارے گئے۔کروڑوں لوگوں کا روزگار ختم ہوگیا اور لاکھوں بیٹیوں کی شادیاں ٹوٹ گئیں،ہزاروں مریضوں کو وقت پر دوا نہیں مل پائی اور ان کی بے وقت موت ہوگئی۔مسٹر شرما نےکہا کہ اگرچہ بھارتیہ جنتا پارٹی اور مودی حکومت نوٹ بندی کو ‘اچھا کامقرار دیتے ہوئے اسے کامیاب بتارہےہیں لیکن سچ یہ ہے کہ یہ ایک ‘برا کام تھا۔بی جے پی کو اس کا اعتراف کرنا چاہئے اور مسٹر مودی کو اس کے لئے افسوس ہونا چاہئے،نوٹ بندی کے فیصلے سے عام لوگ اور ملک کو ذلت کا سامنا کرنا پڑا اور جب لوگوں نے نوٹ بدلوانے کے لئے پیسے جمع کرانے شروع کئے تو زائد از 96فیصد رقم بینک میں واپس آگئی۔

About the author

Taasir Newspaper