سیاست سیاست

مودی نے بے روزگاروں کو دھوکہ دیا: راہل

Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 05-November-2018

الور، (یو این آئی) کانگریس کے قومی صدر راہل گاندھی نے آج یہاں الزام لگایا کہ مودی حکومت کے بے روزگاروں کو دھوکہ دینے کا ہی نتیجہ ہے کہ روزگار نہ ملنے سے پریشان الور کے چار نوجوانوں کو خودکشی کرنی پڑی۔ مالاکھیڑا میں الور اسمبلی کے 11 کانگریس امیدوار کی حمایت میں منعقدہ ریلی سے خطاب کرتے ہوئے مسٹر گاندھی نے کہا کہ وزیر اعظم نریندر مودی نے ہر سال دو کروڑ روزگار دینے کا وعدہ کیا تھا لیکن انہوں نے عوام کو دھوکہ دیا تھااور حالات یہاں تک ہو گئے کہ ہندوستان کی تاریخ میں پہلی بار الور میں 4 نوجوانوں نے روزگار کی کمی کی وجہ سے خودکشی کی ۔انہوں نے کہا کہ نریندر مودی کو بڑے صنعت کاروں سے بات کرنے کے لئے فرصت ہے لیکن الور میں خود کشی کرنے والے نوجوانوں کے خاندانوں سے بات کرنے کاان کے پاس وقت نہیں ہے۔ اچھا ہوتا کہ متاثرہ خاندان کے لوگوں سے بات کرلیتے اور معافی مانگ لیتے۔ انہوں نے کہا کہ راجستھان ہی نہیں ہندوستان میں ملازمت فراہم کرنے کے وعدے کئے تھے لیکن انہوں نے کوئی وعدہ پورا نہیں کیا۔راہل گاندھی نے نریندر مودی پر حملہ کرتےہوئے کہا کہ وہ ہر تقریر میں بھارت ماتاکی جے بولتے ہیں ۔ یہ ان کا دکھاوا ہے اصل میں وہ بھارت ماتا کی جے تقریر میں ہی بولتے ہیں لیکن کام کرتے ہیں انل امبانی، للت مودی، نیرو مودی اور میہل چوکسی کے لئے۔ الور کے کسانوں سے پوچھتے ہوئے کہا کہ کیا حکومت نے آپ کا قرض معاف کر دیا!انہوں نے کہا کہ ایک بار وہ وزیر اعظم کے دفتر گئے تھے اور کسانوں کے قرض معاف کرانے کے بارے میں بات کی تھی لیکن اس کا انہوں نے کوئی جواب نہیں دیا۔ انہوں نے خبردار کیا کہ کانگریس ان سے خوفزدہ نہیں ہے اور انہیں قرض معاف کرنا پڑے گا۔ انہوں نے کہا کہ راجستھان، مدھیہ پردیش اور چھتتیس گڑھ میں کانگریس حکومت قائم ہوتے ہی 10 دن کے اندر اندر قرض معاف کر دے گی ۔انہوں نے کہا کہ مسٹر مودی نے کالا دھن کے خلاف لڑنے کی بات کی تھی لیکن نوٹ کی منسوخی کرکےعام آدمی کو قطار میں کھڑا کردیا۔

About the author

Taasir Newspaper