سیاست سیاست

آلوک ورما معاملہ: بی جے پی کے نشانے پرکھڑگے

Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 12-January-2019

نئی دہلی،(یو این آئی) مرکز کی حکمراں بھارتیہ جنتا پارٹی کے لیڈر اور وزراء نے مرکزی تفتیشی بیورو (سی بی آئی) کے ڈائریکٹر کے عہدے سے آلوک ورما کو ہٹانے پر اختلاف ظاہر کرنے کے سلسلے میں لوک سبھا میں کانگریس کے لیڈر ملک ارجن كھڑگے کو ہدف تنقید بنایا۔ریلوے کے وزیر پیوش گوئل نے جمعہ کو اپنے ٹویٹ میں کہاکہ ’’اصل میں، مسٹر ملک ارجن کھڑگے عجیب و غریب شخصیت کے مالک ہیں۔ جب سلیکشن کمیٹی نے مسٹر آلوک ورما کو سی بی آئی کا سربراہ مقرر کیا، تو اس وقت انہوں نے اختلاف ظاہر کیا تھا اور اب، جب مسٹر ورما کو اسی سلیکشن کمیٹی نے ہٹا دیا ہے، تو وہ اس پر بھی اختلاف ظاہر کررہے ہیں۔بی جے پی کے دیگر لیڈر اور مرکزی وزیر بابل سپریو نے بھی مسٹر ورما کی تقرری اور انہیں عہدے سے ہٹائے جانے، دونوں ہی موقعوں پر مسٹر کھڑگے کے اختلاف ظاہرکرنے پر ان کی سخت مذمت کی ہے۔ انہوں نے ٹویٹ کیاکہ ’’مسٹر ورما کی سی بی آئی سربراہ کے طور پر تقرری اور ہٹائے جانے دونوں ہی صورتوں میں مخالفت سے ثابت ہوتا ہے کہ دماغ کا استعمال کئے بغیر کانگریس کسی بھی چیز کی مخالفت کرتی ہے۔ کچھ وقت تو اپنے ہی اعتماد کی قیمت پر۔ملک کی اہم جانچ ایجنسی سی بی آئی کی تاریخ میں ایسا پہلی بار ہوا ہے کہ بدعنوانی اور ڈیوٹی میں کوتاہی برتنے کے الزام میں اس کے سربراہ مسٹر ورما کو جمعرات کو عہدے سے ہٹا دیا گیا۔ حکومت نے سپریم کورٹ کی جانب سے دو دن قبل بحال کئے گئے مسٹر ورما کو ان کے عہدے سے ہٹا کرفائر بریگیڈ سروس اور ہوم گارڈس کا ڈائریکٹر جنرل بنا دیا ہے۔

About the author

Taasir Newspaper