سیاست سیاست

کمل ناتھ حکومت کا اہم فیصلہ، اب الیکشن ڈیوٹی نہیں کریں گے ٹیچر

Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 11-January-2019

بھوپال(ایجنسی):مدھیہ پردیش کی کمل ناتھ حکومت نے بچوں کی تعلیم بلا ناغہ چلتی رہے اس کو یقینی بنانے کے لئے اہم فیصلہ لیا ہے۔ ریاستی حکومت نے آئندہ لوک سبھا انتخابات سے اساتذہ کو مستثنی ٰ رکھنے کا حکم دیا ہے۔غورطلب ہے کہ حال ہی میں مدھیہ پردیش اسمبلی انتخابات اختتام پزیر ہوئے ہیں اور کچھ مہینوں بعد لوک سبھا انتخابات ہونے جا رہے ہیں، جس کی تیاریاں بھی شروع ہو چکی ہیں۔ انتخابی عمل کو طے شدہ مدت میں ختم کرنے کے لئے اساتذہ کی ڈیوٹی لگائی جاتی ہے۔ اساتذہ کے انتخابی کاموں میں مصروف رہنے کی وجہ سے اکثر اسکولوں کا تعلیم نظام متاثر ہوتا ہے اور اس کا خمیازہ بچوں کو اٹھانا پڑتا ہے۔ اساتذ ہ کے مصروف رہنے کی وجہ سے کلاسیز میں اکثر نساب بھی مکمل نہیں ہو پاتا اور اس سب کا اثر بچوں کے نتائج پر پڑتا ہے۔ اس پریشانی کو مد نظر رکھتے ہوئے ریاست کے تعلیمی مرکز نے اساتذہ کو انتخابی ڈیوٹی سے مستثنیٰ رکھنے کا حکم صادر کیا ہے۔اطلاعات کے مطابق بھوپال ضلع میں لوک سبھا انتخابات کی تیاریوں میں تقریباً 2 ہزار سے زیادہ اساتذہ لگے ہوئے ہیں۔ جس کی وجہ سے اسکولوں میں اساتذہ کی کمی ہو گئی ہے۔ ضلع تعلیمی افسران کا کہنا ہے کہ اساتذہ کو فوری طور پر انتخابی کاموں سے علیحدہ کر دیا جائے گا۔حالانکہ افسران کا کہنا ہے کہ انتخابی کاموں کو کرنے کے لئے کثیر تعداد میں ملازمین موجود نہیں ہیں لہذا اساتذہ کو ڈیوٹی پر لگایا جاتا ہے۔ نیز اساتذہ کو اسکولوں کے آس پاس ہی کے مراکز میں ڈیوٹی پر مامور کیا جاتا ہے تاکہ وہ بچوں کی تعلیم پر توجہ دے سکیں۔

About the author

Taasir Newspaper