کھیل

رہانے، پنت اور وجےشنکر عالمی کپ کی دوڑ میں شامل :پرساد

Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 12-February-2019

نئی دہلی (یواین آئی) ہندوستانی کرکٹ ٹیم کی سلیکشن کمیٹی کے سربراہ ایم ایس کے پرساد نے کہا ہے کہ اس سال انگلینڈ میں ہونے والے ورلڈ کپ کے لئے رشبھ پنت، وجے شنکر اور اجنکیا رہانے سمیت تینوں کھلاڑیوں کے ناموں پر غور کیا جا رہا ہے اور عالمی کپ کے لئے منتخب کی جانے والی ٹیم کے لئے یہ تمام کھلاڑی دوڑ میں شامل ہیں۔چیف سلیکٹر نے ایک انٹرویو میں کہا، “بین الاقوامی کرکٹ کونسل (آئی سی سی) نے ورلڈ کپ کے لئے 15 رکنی ٹیم کا اعلان کرنے کی آخری تاریخ مقرر کی ہے جس کے پیش نظر ہندوستانی سلیکٹر ہر کھلاڑی پر نظر رکھ رہے ہیں اور حتمی تاریخ سے پہلے ہی 15 رکنی ہندوستانی ٹیم کا اعلان کر دیا جائے گا۔”پرساد نے کہا، “اگر پنت ایک جارح بلے باز ہیں تو وجے شنکر کو بطور آل راؤنڈر بھی دیکھا جا رہا ہے۔ اس مہینے نیوزی لینڈ کے خلاف کھیلی گئی سیریز میں وجے نے اپنی شاندار کارکردگی سے سب کو متاثر کیا ہے اور ورلڈ کپ کے لئے اپنی دعویداری کو مضبوط کیا ہے۔ہندوستانی کرکٹ ٹیم کے چیف سلیکٹر نے کہا، بلاشبہ پنت ورلڈ کپ کے لئے منتخب کی جانے والی ٹیم کا حصہ ہو سکتے ہیں۔ وہ ایک جارح کھلاڑی ہیں۔ کرکٹ کے سبھی فارمیٹس میں گزشتہ ایک سال کے دوران رشبھ کی کارکردگی شاندار رہی ہے۔ ہمارا خیال ہے کہ پنت میں تھوڑی اور پختگی کی ضرورت ہے اور اس کے علاوہ انہیں تجربہ بھی حاصل کرنا ہوگا۔اسی وجہ سے پنت کو ہندوستان اے ٹیم میں شامل کیا گیا ہے۔ نوجوان وکٹ کیپر بلے باز رشبھ پنت نے اگرچہ ابھی تک صرف تین ون ڈے میچ ہی کھیلے ہیں اور وہ بھی ویسٹ انڈیز کے خلاف، لیکن ٹیسٹ کرکٹ میں اور گزشتہ سال ہندوستان اے کی جانب سے کھیلتے ہوئے انہوں نے بہترین کارکردگی کی وجہ سے سلیکٹروں کی توجہ اپنی طرف مبذول کی ہے۔پنت کو پہلے ریزرو وکٹ کیپر کے طور پر دیکھا جا رہا تھا لیکن دنیش کارتک نے گزشتہ ایک سال کے دوران خود کو نچلے آرڈر کے بلے باز کے طور پر خود کو ثابت کیا ہے۔ سلیکٹر ابھی پنت کو ٹیم میں ایک ماہر بلے باز کے طور پر شامل کرنے پر غور کر رہے ہیں۔واضح رہے کہ پنت نے گزشتہ سال انگلینڈ کے خلاف ٹیسٹ سیریز کے آخری میچ میں سنچری بناکر اپنی بلے بازی سے سب کو متاثر کیا تھا۔ اس کے علاوہ پنت نے حال ہی میں آسٹریلیا کے خلاف ٹیسٹ سیریز میں وکٹ کیپنگ کے ساتھ ساتھ بلے بازی میں بھی شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کیا تھا۔چیف سلیکٹر نے ٹیسٹ کرکٹ کےسلامی بلے باز لوکیش راہل کے سلسلے میں کہا، “راہل اب بھی ورلڈ کپ کے لئے منتخب کی جانے والی ٹیم کا حصہ ہو سکتے ہیں، لیکن انہیں رن بنا کر خود کو ثابت کرنا ہوگا۔”واضح رہے کہ گزشتہ سال جنوبی افریقہ کے دورے میں ون ڈے کے علاوہ تمام فارمیٹس میں راہل نے اپنی کی کارکردگی سے کافی مایوس کیا تھا اور اس سیشن کے دوران انہوں نے انگلینڈ کے دورے میں صرف تین ون ڈے میچ کھیلے ہیں۔نیوزی لینڈ کے خلاف ٹوئنٹی -20 سیریز میں وجے نے اپنی آل راونڈ کارکردگی سے کافی متاثر کیا ہے۔ مستقل کپتان وراٹ کوہلی کی غیر موجودگی میں وجے کو تیسرے نمبر پر بلے بازی کرنے کو کہا گیا تھا۔تمل ناڈو کے آل راؤنڈر نے کہا کہ تیسرے نمبر پر بلے بازی کرنے کا موقع ملنے پر وہ کافی حیران ہو گئے تھے۔وجے نے نیوزی لینڈ کے خلاف هیملٹن میں کھیلے گئے آخری ٹوئنٹی -20 میچ میں زبردست بلے بازی کرتے ہوئے 28 گیندوں میں پانچ چوکوں اور دو چھکوں کی مدد سے 43 رن بنائے تھے۔پرساد نے وجے شنکر کو ٹیم میں شامل کئے جانے کے امکان پر کہا، وجے چوتھے آل راؤنڈر کے طور پر ان 20 کھلاڑیوں میں شامل ہو سکتے ہیں جن میں سے 15 کھلاڑیوں کو ورلڈ کپ کے لئے سلیکٹر ہندوستانی ٹیم میں شامل کریں گے۔ وجے کو جب بھی موقع ملا ہے انہوں نے اپنی قابلیت اور صلاحیت کا مظاہرہ کیا ہے. لیکن ہمیں یہ دیکھنا ہوگا کہ ٹیم میں ان کی جگہ کہاں ہو سکتی ہے۔ “اجنکیا رہانے کو ورلڈ کپ ٹیم میں شامل کئے جانے کے سوال پر چیف سلیکٹر نے کہا، “گھریلو کرکٹ میں رہانے کی کارکردگی شاندار رہی ہے جس کے پیش نظر رہانے کی ورلڈ کپ ٹیم کے لئے دعویداری کافی مضبوط ہے۔”خیال رہے کہ رہانے نے گزشتہ سال جنوبی افریقہ کے دورے کے بعد سے کوئی ون ڈے میچ نہیں کھیلا ہے، لیکن گھریلو کرکٹ میں انہوں نے ہندوستان اے کی جانب سے کھیلتے ہوئے اپنی 11 اننگز میں 74.62 کی اوسط سے 597 رنز بنائے ہیں جس میں دو سنچریاں اور تین نصف سنچری بھی شامل ہیں۔

About the author

Taasir Newspaper