ہندستان ہندوستان

پروفیسر رحمت اللہ اور پروفیسر مشتاق پٹیل کی تہنیتی تقریب

Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 12-February-2019

حیدرآباد، (پریس ریلیز) مولانا آزاد نیشنل اُردو یونیورسٹی کے دو اساتذہ پروفیسر ایس ایم رحمت اللہ اور پروفیسر مشتاق احمد آئی پٹیل کی آج یونیورسٹی اساتذہ کی انجمن کے زیر اہتمام تہنیتی تقریب منعقد ہوئی ۔ ڈاکٹر محمد اسلم پرویز، وائس چانسلر نے صدارت کی۔ پروفیسر ایس ایم رحمت اللہ ، سری کرشنا دیوارایا یونیورسٹی، اننت پور کے وائس چانسلر مقرر کیے گئے ہیں جبکہ پروفیسر مشتاق احمد آئی پٹیل، سنٹرل یونیورسٹی آف کرناٹک، گلبرگہ کے رجسٹرار کے عہدہ پر فائز ہوئے ہیں ۔ دونوں اساتذہ کی گلپوشی و شال پوشی کی گئی اور یادگاری تحفے دیے گئے۔ ڈاکٹر ایم اے سکندر مہمانِ اعزازی تھے۔ اس موقع پر خطا ب کرتے ہوئے پروفیسر ایس ایم رحمت اللہ جو مانو میں رجسٹرار، ڈین ، فینانس آفیسر جیسے اہم عہدوں پر فائز رہ چکے ہیں نے کہا کہ ان کے لیے یہ لمحۂ شکر گزاری ہے۔ اللہ رب العزت کے ساتھ ساتھ ان تمام افراد کا شکریہ ادا کرنا چاہتے جنہوں نے ان سے تعاون کیا۔ انہوں نے مانو کے وائس چانسلرس پروفیسر اے ایم پٹھان، پروفیسر محمد میاں اور موجودہ شیخ الجامعہ ، ڈاکٹر محمد اسلم پرویز کا بھی شکریہ ادا کیا، جنہوں نے ان پر اعتماد کیا اور انہیں مختلف اہم ذمہ داریاں دیں۔ انہوں نے کہا کہ جب وہ یہاں سے رخصت ہورہے تھے اس وقت ڈاکٹر محمد اسلم پرویز نے انہیں نصیحت کی تھی کہ وہ اپنی نئی جامعہ میں اس طرح کام کریں کہ وہاں لوگوں کو تبدیلی کا احساس ہو۔ انہوں نے کرشنا دیورایا یونیورسٹی میں بحیثیت وائس چانسلر ابتدائی تجربات بھی بیان کیے۔ پروفیسر مشتاق احمد آئی پٹیل نے کہا کہ انہوں نے جو بھی مانو میں سیکھا اس سے استفادہ کر رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ وہ سنٹرل یونیورسٹی آف کرناٹک کے رجسٹرار ہیں لیکن مانو برادری کیلئے مشتاق پٹیل ہی ہیں۔ڈاکٹر محمد اسلم پرویز، وائس چانسلر نے اپنے صدارتی خطاب میں کہا کہ دونوں پروفیسرس کا دو یونیور سٹیو ں میں تقرر ایک طرح سے مانو کی توسیع ہے۔ وہ ان اداروں میں مانو کا نام روشن کریں گے۔ انہوں نے دونوں کیلئے نیک تمنائوں کا اظہار کیا۔ جناب محمد مصطفی علی سروری، نائب صدر مانوٹا نے کہا کہ یہ ایک اعزاز ہے کہ مانو کے دو پرو فیسر س دیگر یونیورسٹیوں میں وائس چانسلر اور رجسٹرار بن کر گئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہم میں بہت سے باصلاحیت لوگ آئندہ بھی دیگر اداروں میں جلیل و قدر عہدوں پر قائز ہوں گے ۔ اس کے علاوہ ہمیں عزم کرنا ہے کہ اردو یونیورسٹی کے طلبہ بھی اسی طرح اہم ذمہ داریاں لینے کے قابل بنیں۔ ڈاکٹر محمد جنید ذاکر ، سابق صدر مانوٹا نے دونوں پروفیسرس کا خیر مقدم کیا اور کہا کہ اس نوزائیدہ جامعہ سے اعلیٰ عہدوں پر تقررات کی شروعات پروفیسر ٹی وی کٹی منی کے ٹرائبل یونیورسٹی کے وائس چانسلر بننے سے ہوئی تھی۔ اس موقع پر پروفیسر صدیقی محمد محمود، پروفیسر شاہدہ، پروفیسر عبدالعظیم، ڈاکٹر کنیز زہرہ اور ڈاکٹر جی وی رتناکرنے بھی اظہار خیال کیا۔ ڈاکٹر بونتو کوٹیا، جنرل سکریٹری مانوٹا نے کارروائی چلائی ۔ ڈاکٹر کہکشاں لطیف، جوائنٹ سکریٹر ی (پبلسٹی ) نے شکریہ ادا کیا۔ ڈاکٹر سید امان عبید کی قرأت کلام پاک سے جلسہ کا آغاز ہوا۔

About the author

Taasir Newspaper