سیاست سیاست

چندر بابو کی بھوک ہڑتال میں راہل ،منموہن اور فاروق بھی شامل

Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 12-February-2019

نئی دہلی(محمدگوہر) صدر کانگریس راہل گاندھی نے واضح کرتے ہوئے کہا’’ ہم بی جے پی،نریندر مودی کوشکست دیں گے اوردو ماہ میں اپوزیشن جماعتیں مودی کو یہ بتادیں گے کہ ملک میں کس طرح کے جذبات ہیں‘‘۔انہوں نے اے پی کو خصوصی درجہ اور اے پی تنظیم نو قانون میں کئے گئے وعدوں کو پورا کرنے کے مطالبہ پر دہلی کے اے پی بھون میں تلگودیشم کے قومی سربراہ و اے پی کے وزیراعلی این چندرابابونائیڈو کی جانب سے اے پی بھون میں کی جارہی ایک روزہ بھوک ہڑتال سے یگانگت کا اظہار کیا۔راہل گاندھی بھوک ہڑتالی کیمپ پہنچے اور چندرابابونائیڈو سے ملاقات کرتے ہوئے اے پی کی جدوجہد کے سلسلہ میں بھرپور حمایت کی یقین دہانی کروائی ۔اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے راہل گاندھی نے کہا کہ وزیراعظم نے اے پی کے ساتھ جو بھی وعدے کئے ہیں ، ان کو وزیراعظم ہی پورے کریں۔وہ آندھرا کے عوام کے ساتھ ہیں۔انہوں نے کہا ’’مودی جہاں بھی جاتے ہیں جھوٹ بولتے ہیں۔وہ اے پی گئے انہوں نے وہاں خصوصی درجہ کے مسئلہ پر جھوٹ بولا۔وہ شمال مشرقی ریاست گئے ہیں جہاں انہوں نے ایک اور جھوٹ بولا ۔وہ مہاراشٹرگئے جہاں انہوں نے جھوٹ بولا ۔اس طرح وزیراعظم جہاں بھی جاتے ہیں جھوٹ کا سہارا لیتے ہیں۔ان کی کوئی بھی ساکھ نہیں رہی ہے۔‘‘انہوں نے نشاندہی کرتے ہوئے کہا ’’وزیراعظم یہ کہتے ہوئے وزیراعظم بنے کہ وہ رشوت خوری کے خلاف جدوجہد کریں گے ۔ہر دفاعی معاملے میں اینٹی کرپشن کی شق ہوتی ہے ۔ہندو اخبار نے لکھا ہے کہ مودی نے اس شق کو ختم کردیا۔یہ بات واضح ہے کہ لوٹ کے لئے ہی وزیراعظم نے ایسا کیا ہے۔راہل گاندھی نے ہندو اخبا ر کا حوالہ دیتے ہوئے عوام سے پوچھا کہ آیا آپ نے آج کا یا کل کا ہندو اخبار پڑھا ؟انہوں نے رفائل کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ چوکیدار چور ہے۔وزیراعظم نے اے پی کے پیسہ کی چور ی کی اور اس پیسہ کو انل امبانی کو دیا۔یہ ایک حقیقت ہے۔سابق وزیراعظم منموہن سنگھ ،نیشنل کانفرنس کے سربراہ فاروق عبداللہ ،این سی پی کے رہنما مجید میمن کے علاوہ شیوسینا کے ایم پی سنجے راوت نے بھی بھوک ہڑتالی کیمپ پہنچ کر چندرابابو سے یگانگت کا اظہارکیا

About the author

Taasir Newspaper