دنیا بھر سے

ایس 400′ روسی دفاعی نظام کی خریداری پرترکی کو پابندیوں کا سامنا ہو سکتا ہے: پومپیو

Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network | Uplo0aded on 13-April-2019

واشنگٹن،امریکی وزیرخارجہ مائیک پومپیو نے کہا ہے کہ اگر ترکی ‘نیٹو’ کارکن ہونے کے باوجود روس سے اس کا فضائی دفاعی نظام ‘ایس 400’ خریدتا ہے تو انقرہ امریکا کے ‘ایف 35’ لڑاکا طیاروں سے محروم ہو جائے گا. اس کے علاوہ ترکی کو اضافی پاپندیوں کا بھی سامنا ہو سکتا ہے۔امریکی “ڈیفنس نیوز” ویب سائیٹ کے مطابق امریکی سینٹ کی خارجہ کمیٹی کے اجلاس سے خطاب میں مائیک پومپیو کا کہنا تھا کہ ترکی کو روس کے ‘ایس 400’ فضائی دفاع سسٹم یا امریکا کے ‘ایف 35’ جنگی طیاروں میں سے کسی ایک کا انتخاب کرنا ہوگا.امریکی وزیر خارجہ نے کہا کہ وہ ترک عہدیداروں کو ان کے سامنے بیٹھ کر روس سے دفاع نظام کی خریداری سے باز رہنے کی تاکید اور اس ڈیل کے نتائج پر خبردار کرچکے ہیں. میں ایک بار پھر ترک حکومت کو خبردار کرتا ہوں کہ وہ روس کیساتھ ‘ایس 400’ دفاعی نظام کی خریداری سے باز رہے۔اس موقع پر سینٹر کریس وان ھولین نے پوچھا کہ اگر ترکی اور روس کی دفاعی ڈیل کی مالیت اڑھائی ارب ڈالر ہوئی تو کیا امریکا ترکی پرپابندیاں عاید کرے گا تو مائیک پومپیو نے کہا کہ ‘ہاں’ سنہ 2017ء میں امریکا کی انسداد دشمنی کے قانون کے تحت ہم ترکی پر پابندیاں عاید کر سکتے ہیں۔خیال رہے کہ امریکا اور ترکی کے درمیان حالیہ عرصے میں روسی ساختہ فضائی دفاعی سسٹم ‘ایس 400’ ایک بڑے تنازع کی شکل اختیار کیے ہوئے ہے. امریکا ترکی کو روسی دفاعی نظام کی خریداری سے باز رکھنا چاہتا ہے جب کہ ترکی کا اصرار ہے کہ وہ امریکی دبائو کو قبول نہیں کرے گا. امریکا نے دھمکی دی ہے کہ اگر انقرہ نے ماسکو کے ساتھ دفاعی ڈیل تو واشنگٹن ترکی کو ‘ایف 35’ جنگی طیاروں کی فراہمی کا معاہدہ ختم کر دے گا.

About the author

Taasir Newspaper