ہندستان ہندوستان

ڈاکٹر جمیل جالبی کی رحلت اردو زبان وادب کے لیے ناقابل تلافی نقصان: محمد صبیح بخاری

Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network | Uplo0aded on 23-April-2019

قطر؍دوحہ(پریس ریلیز) بزم صدف انٹرنیشنل دوحہ کی جانب سے گذشتہ کل بزم صدف انٹرنیشنل کے سرپرست اعلی اور مختلف ادبی ونیم ادبی تنظیموں کے سرپرست جناب محمد صبیح بخاری کی رہائش پر اردو کے عہد ساز ادیب ، ماہر لسانیات، ، نقاد ، مرتب ومدون اور ترجمہ نگار ڈاکٹر جمیل جالبی کے سانحہ ارتحال پر ایک تعزیتی جلسے کا انعقاد کیا گیا ۔ اس تعزیتی جلسے کی صدارت خود جناب محمد صبیح بخاری نے فرمائ جبکہ نظامت کا فریضہ اردو کے معروف شاعر احمد اشفاق نے انجام دیا۔ بزم صدف انٹرنیشنل کے بینر تلے منعقد اس تعزیتی جلسے کا باضابطہ آغاز جناب حبیب النبی کی تلاوت کلام الہی سے ہوا ۔ دوحہ کا اردو حلقہ اس معنی میں بہت حساس واقع ہوا ہے کہ وہ اپنے محسنوں کے نام اور کام سے کبھی غافل نہیں رہتا اور اردو زبان وادب کی آبیاری میں جس نے بھی اپنا خون جگر صرف کیا اسے سر آنکھوں بر بٹھانے میں پیش پیش رہتا ہے۔ ڈاکٹر جمیل جالبی سے بھی اہل دوحہ کی محبت لازوال ہے اور یہ تعزیتی جلسہ اس کا بین ثبوت ہے۔ گوکہ ان کی رحلت نے ایک دیر پا خلا پیدا کردیا ہے جس کا پر ہونا بہت مشکل ہے تاہم ان کے نقش قدم پر ہم اپنے آئندہ کے سفر کی سمت کا تعین کریں گے اور ان کے کاموں کو آگے بڑھانے کی ہر ممکن کوشش کریں گے ۔ مذکورہ باتیں بزم صدف انٹرنیشنل کے سرپرست اعلی اور صدر جلسہ تعزیت جناب محمد صبیح بخاری نے کہیں اور بزم اردو قطر کی طرف سے ڈاکٹر جمیل جالبی پر ایک عالمی سیمینار کے انعقاد اور بزم صدف انٹرنیشنل کی جانب سے ڈاکٹر جمیل جالبی کی کتابوں کی اشاعت کا اعلان کیا۔ ناظم جلسہ احمد اشفاق نے ڈاکٹر جمیل جالبی کی شخصیت اور خدمات کا ایک مختصر تعارف پیش کرتے ہوئے ان کے سانحہ ارتحال کو پوری اردو دنیا کا مشترکہ غم قرار دیا ۔ بزم صدف انٹرنیشنل کے چیئرمین شہاب الدین احمد نے ڈاکٹر جمیل جالبی کی چھہ دہائیوں پر محیط اردو زبان وادب کی خدمت اور تاریخ ادب اردو کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ انھوں نے اردو زبان وادب میں جو اضافہ کیا ہے اس نے ان کو اردو دنیا میں امر بنادیا ہے۔ جن دیگر لوگوں نے اس موقع پر اظہار خیال کیا ان میں قیصر مسعود ، ڈاکٹر ندیم ظفر جیلانی دانش ، محمد شاہد خان ، شوکت علی ناز جاوید احمد ، اشفاق دیشمکھ ، راقم اعظمی، منصور اعظمی ، محمد فیاض،رضوان احمد، عرفان اللہ ، عمران مشکور ، صدرالدین اور سید شکیل احمد بطور خاص قابل ذکر ہیں۔ اس تعزیتی جلسے کا اختتام بزم صدف انٹرنیشنل کے چیئرمین شہاب الدین احمد نے ڈاکٹر جمیل جالبی کی مغفرت اور بلندئ درجات کے لیے اجتماعی دعا کے ساتھ کیا۔

About the author

Taasir Newspaper