ریاست

بہوکوسوتیلی ساس اور نندنے دودھ میں زہرملاکر پلایا

Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 16-May-2019

کٹیہار،(عاشق رحمانی)، بدھ کو بہو کو سوتیلی ساس اور نند کے ذریعہ دودھ میں زہرملاکر پلانے کا معاملہ سب ڈویزنل اسپتال بارسوئی میںآیا۔ دیہی باشندوں کی مدد سے متاثرہ کو سب ڈویزنل اسپتال بارسوئی لایاگیا۔ جہاں بلیا بیلون تھانہ واقع عماد پور گاؤں کی متاثرہ انجنا 25سالہ نے بتایاکہ اس کی شادی 8سال قبل محمد امتیاز سے ہوئی تھی۔ شادی کے بعد مزدوری کرنے شوہر باہر چلاگیا۔ بیچ بیچ میں وہ آتاتھا لیکن کل حادثہ کی رات وہ ممبئی میں تھا، ادھر اس کی سوتیلی ساس زبیدہ خاتون اور نند سائشہ خاتون اکثر اس کے ساتھ غلط سلوک کرتے تھے۔ اکثر گھر سے نکل جانے کے لئے دباؤ ڈالتے تھے۔ اور کل رات اس نے موقع دیکھ کر اس کے دودھ میں زہرملاکر پلادیا۔ جس سے اس کی حالت بگڑگئی۔ گاؤں والے کو جب خبرملی تو وہ اسپتال لانا چاہتے تھے۔ لیکن اسے لانے نہیں دیاجارہاتھا آخر میں گاؤں والے زور زبردستی متاثرہ کو سب ڈویزنل اسپتال بارسوئی لایا جہاں ڈاکٹر نے اس کے جسم سے زہر باہر نکالا۔ ڈاکٹر راجیو نین نے کہا کہ ابھی بھی حالت قابوہونے میںکچھ وقت لگے گا۔ متاثرہ نے خاندان کے دیگر ممبر فرحانہ، شبانہ، ذاکر، سنجیل پر ان دونوں کا ساتھ دینے کاالزام لگایا۔ باشندوں نے کہاکہ اس سے 15 سال قبل بھی انہیں دونوں نے متاثرہ اپنے ساس اورنند کو دودھ میں زہردے کر ماردیاتھا لیکن گاؤں میں ہی پنچایتی کر معاملہ کو رفع دفع کردیاگیا۔ جس وجہ سے ان لوگوں کا حوصلہ بڑھاہواہے۔ سبھی نے ملزم پر سخت کارروائی کا مطالبہ کیاہے۔سب ڈویزنل اسپتال بارسوئی نے تمام جانکاری تھانہ کو دی ہے۔

About the author

Taasir Newspaper