دنیا بھر سے

ایران افیون زدہ کیمیائی ہتھیار تیار کر رہا ہے: امریکی رپورٹ میں انکشاف

Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 18-June-2019

تہران/واشنگٹن،امریکا کی ریسرچ فائونڈیشن ‘ہیریٹیج’ کی ایک رپورٹ میں سابق معاون وزیر دفاع پیٹر بروکس کے حوالے سے انکشاف کیا گیا ہے کہ ایران ادویات اور نشہ آور مواد کو عسکری مقاصد کے لیے استعمال کر رہا ہے۔رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ایرانی فوج کے زیر نگرانی قائم ایک اسلحہ ساز مرکز میں افیون پر مشتمل مواد کو کیمیائی اسلحہ سازی کے لیے استعمال کرنے کا تجربہ کیا گیا۔ یہ ہتھیار انسانوں کی جسمانی معذوری کا موجب بن سکتے ہیں۔پیٹر بروکس کی تیارکردہ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ مذکورہ افیونی مواد معذوری، اپاہج پن اور لوگوں کو قتل کرنے کے استعمال کیا جا سکتا ہے اسے کھانے والے مختلف عوارض کا شکار ہونے کے ساتھ یہ جسم کے اعصابی نظام پر حملہ آور ہوتا ہے۔اگرچہ افیونی مواد کو سول طب اور لیگل ویٹرنری سائنس کے شعبوں میں استعمال کیا جاتا ہے مگر ان دائروں سے باہر افیونی مواد کا استعمال غیر معمولی تشویش کا باعث بن سکتا ہے۔ اگر اس کی مدد سے کیمیائی ہتھیار تیار کیے جاتے ہیں تو یہ کیمیائی ہتھیاروں کے بین الاقوامی معاہدے کی کھلی خلاف ورزی ہے۔رپورٹ میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ ایرانی پالیسی کی مخالفت کرنے والے شہریوں کے خلاف کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال کے خطرات بڑھ گئے ہیں۔کہا جا رہا ہے کہ ایران اس طرح کے کیمیائی ہتھیار یمن اور شام میں اپنے اتحادیوں کو دینے کے ساتھ حزب اللہ، حماس اور عراقی ملیشیائوں کو بھی فراہم کر چکا ہے۔

About the author

Taasir Newspaper