ہندستان ہندوستان

کسان سمان یوجنا میں پٹے دار کسانوں کو بھی شامل کیاجائے: بھوپیش

Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 13-June-2019

نئی دہلی،(یو این آئی) چھتیس گڑھ کے وزیر اعلی بھوپیش بگھیل نے وزیر اعظم نریندر مودی پر زور دیا ہے کہ وزیر اعظم کسان سمان فنڈ اسکیم میں جنگل حقوق قانون کے تحت پٹے دار کسانوں کو بھی شامل کیا جائے اور انہیں چھ ہزار کی بجائے 12 ہزار روپے سالانہ دیا جائے۔مسٹر بگھیل نے وزیر اعظم کو مکتوب ایک خط میں یہ درخواست کی ہے۔ انہوں نے کہا ہے کہ سال 2006 میں بننے والے جنگل حقوق قانون جنگل کے علاقے میں رہنے والوں کو 13 ذاتی اور کمیونٹی حق فراہم کرتا ہے۔ اس کے لاگو ہونے سے لاکھوں ایسے خاندانوں کو زمین کے پٹے ملے ہیں اور ان کے معیار زندگی میں بہتری آئی ہے۔ چھتیس گڑھ میں چار لاکھ خاندان کو اسی قانون کے تحت پٹے دئے جارہے ہیں۔ یہ لوگ خط افلاس سےنیچے کی زندگی گزار رہے ہیں۔وزیر اعلی نے کہا کہ فروری 2019 میں چھوٹے اور سرحدی کسانوں کو چھ ہزار روپے سالانہ دیئے جانے کے وزیر اعظم کسان سمان فنڈ منصوبہ شروع کیا گیا ہے جس میں جنگلاتی زمین کے پٹے داروں کو شامل نہیں کیا گیا ہے۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ وزیر اعظم کسان سمان فنڈ میں جنگل حقوق کے قانون کے تحت پٹے داروں كو شامل کرکے انہیں چھ ہزار روپے کی بجائے 12 ہزار روپے سالانہ دیئے جائیں۔

About the author

Taasir Newspaper